ایف بی آر نے اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی

ایف بی آر نے اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی


اسلام آباد(24 نیوز)ایف بی آر نے اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی جہانگیر ترین نو کروڑ روپے سےزائد ٹیکس دے کر پہلے نمبر آگئے، صدر عارف علوی نے 17 لاکھ ، وزیر اعظم عمران خان نے ایک لاکھ 37 ہزار ، سابق وزیر اعظم نواز شریف نے دو لاکھ 63 ہزار روپے ٹیکس ادا کیا۔

ایف بی آر نے مسلسل پانچویں بار اراکین پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کردی ہے ۔ 2017 میں پی ٹی آئی کے سابق رکن جہانگیر ترین نے نو کروڑ روپے ، روزی خان کاکڑ نے چار کروڑ، سینیٹر طلحہ محمود نے 4 کروڑ ، سینیٹر تاج محمد آفریدی نے 2 کروڑ، اسفند یار بھنڈارا نے دو کروڑ اور شیخ فیاض الدین نے ایک کروڑ ،روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا سینٹر اعتزاز احسن نے 2 کروڑ ، سینٹر فاروق ایچ نائیک نے 1 کروڑ اور اسحاق ڈار نے 93 لاکھ 84 روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا ۔

2017 میں وزیر اعظم عمران خان نے ایک لاکھ 3763 روپے ٹیکس ادا کیا اور صدر عارف علوی نے 17 لاکھ روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا سابق وزیر اعظم نواز شریف نے دو لاکھ اور شاہد خاقان عباسی نے 30 لاکھ 86 ہزار روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا خواجہ آصف نے 55 لاکھ اور حمزہ شہباز شریف نے 82 لاکھ روپے اورچوہدری افتخار نذیر نے ایک کروڑ 40 لاکھ روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا ۔

کابینہ اراکین میں وزیر دفاع پرویز خٹک نے 9 لاکھ ، اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے 57 لاکھ 80 ، وزیر خزانہ اسد عمر نے 48 لاکھ ،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے 6 لاکھ، مراد سعید نے 2 لاکھ ، وزیر تعلیم شفقت محمود نے 10 لاکھ ، وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے 4 لاکھ 75 ، شیریں مزاری نے 15 لاکھ ، طارق بشیر چیمہ نے 2 لاکھ اور غلام سرور خان نے 13 لاکھ روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا ۔

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے 80 لاکھ ، وزیر اعلی بلوچستان جام کمال نے 61 لاکھ وزیر اعلی خیبر پختونخواہ محمود جان نے ایک لاکھ روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا ، وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کا ٹیکس ڈائریکٹری میں نہیں ملا ۔

پیپلزپارٹی رہنماء منظور وسان نے ایک کروڑ ، انجینیئر پیسو مل نے ڈھائی کروڑ ، سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے 41 لاکھ ، فریال تالپور نے 28 لاکھ ، چوہدری پرویز الہی نے 21 لاکھ ، سینیٹر شیری رحمان نے 18 لاکھ ، شیخ رشید نے 7 لاکھ ، خرم دستگیر نے 2 لاکھ ، پرویز ملک نے 7 لاکھ ، سردار ایاز صادق نے 2 لاکھ ، مولانا فضل الرحمان نے 1 لاکھ اور سید خورشید احمد شاہ نے 2 لاکھ روپے سے زائد ٹیکس ادا کیا ۔ جنرل پبلک ڈائریکٹری میں 16 لاکھ ہزار افراد نے اپنے ٹیکس گوشوارے جمع کرائے ہیں۔