ہنستابستاگھراجڑگیا، مضرصحت کھانےسے 5افراد جاں بحق

ہنستابستاگھراجڑگیا، مضرصحت کھانےسے 5افراد جاں بحق


کراچی(24 نیوز)  ہوٹل کے زہریلے کھانے نے ضلع پشین کے معروف ادیب اورعالم دین کا گھر اجاڑدیا، زہریلاکھانا کھانے سے 5بچے جاں بحق ہوگئے۔

پشین سے اہلیہ کے علاج کیلئے کراچی آنے والے شخص فیصل کاکڑ کے خاندان کو ہوٹل کے زہریلے کھانے نے اجاڑ دیا،کراچی پہنچنے کے بعد انہوں نے نوبہار نامی ایک ہوٹل سے کھانا منگوا کر کھایا،ہوٹل سے منگوایا گیا کھانا کھانے کے بعد فیصل کاکڑ کی اہلیہ کی طعبیت بگڑگئی، وہ اسے لے کر اسپتال پہنچا، جب دونوں میاں بیوی اسپتال سے واپس آئے تو پانچوں بچے جنہوں نے ماں کے ساتھ کھانا کھایا تھا بے ہوش پڑے تھے، بچوں کواسپتال لایا گیا تو ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کردی۔ 

جاں بحق ہونے والے بچوں میں ڈیڑھ سال کاعبدالعلی،4 سال کاعزیزفیصل،6 سال کی عالیہ، 7 سال کا توحید اور 9 سال کی صلوی شامل ہیں،واقعے کے بعد ضلع پشین میں ممتاز عالم دین عبدالعلی اخون زادہ کے گھر پر تعزیت کرنے والوں کا ہجوم ہے جبکہ پورا محلہ بھی غم سے نڈھال ہے۔ پولیس نے شہریوں سے اپیل کی ہےکہ گزشتہ روز نوبہار ہوٹل یا اسٹوڈنٹ بریانی کھانے سے اگر کسی کو کوئی شکایت ہوئی ہے تو فوری طور پر آگاہ کیا جائے۔