تنقید اور الزامات سب بےکار، ڈیم بنانےکاٹھیکہ مشیرکابیٹا لے اڑا

تنقید اور الزامات سب بےکار، ڈیم بنانےکاٹھیکہ مشیرکابیٹا لے اڑا


اسلام آباد (24 نیوز) تنقید اور الزامات کے باوجود وزیراعظم کے مشیر کے بیٹے کی کمپنی کو ڈیم بنانے کا ٹھیکہ مل ہی گیا، واپڈا نے مہمند ڈیم کے ٹھیکے کی منظوری دے دی۔

 واپڈا نے بالآخر مہمند ڈیم کا ٹھیکہ ڈیسکون کمپنی کو دے ہی دیا۔چائنا گزوبا گروپ اور ڈیسکون کمپنی کو مشترکہ طور پر کنٹریکت ایوارڈ کیا گیا۔ واپڈا کے مطابق لیٹر آف ایکسپٹینس جاری کیا جاے گا اور مارچ میں کنٹریکٹر پروجیکٹ سائٹ پر منتقل ہو جائیں گے۔ قبائلی علاقے مہمند میں دریائے سوات پر بننے والا یہ منصوبہ 5 سال 8 ماہ میں مکمل ہو گا۔جس سے 800 میگاواٹ بجلی حاصل ہو گی اور 12 لاکھ ایکڑ فٹ پانی زخیرہ کیا جا سکے گا۔

سیاسی جماعتوں کی طرف سے اس ٹھیکےپر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اسے مفادات کا ٹکراو قرار دیا تھا۔وزیراعظم کے مشیر عبدالرزاق داود کے ڈیسکون میں شیئرز اور وابستگی پر سوالات اٹھائے گے تھے۔لیکن دوسری طرف واپڈا کاکہناہےکہ ٹھیکہ پیپرا اور انجینئرنگ کونسل کے قوانین کے مطابق دیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق 309 ارب روپے میں بننے والے اس منصوبے کی لاگت میں اضافے کا بھی امکان ہے۔