پارٹی فنڈنگ کیس، مسلم لیگ ن نے الیکشن کمیشن میں جواب جمع کروادیا

پارٹی فنڈنگ کیس، مسلم لیگ ن نے الیکشن کمیشن میں جواب جمع کروادیا


اسلام آباد(24نیوز) الیکشن کمیشن میں مسلم لیگ ن نے پارٹی فنڈنگ سے متعلق تحریک انصاف کے الزامات پر جواب جمع کرادیا ، مسلم لیگ ن نے تحریک انصاف کی درخواست کو من گھڑت اوربے بنیاد قراردیتے ہوئے کہاکہ ختم ہوجانے والے قوانین کے حوالے اورسیاسی مقاصد کے حصول کیلئے دائر درخواست کوخارج کیا جائے۔
تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن کے تین رکنی کمیشن نے مسلم لیگ ن کے خلاف مبینہ غیرملکی فنڈنگ سے متعلق درخواست کی سماعت کی۔ مسلم لیگ ن نے چیئرمین پارٹی راجہ ظفرالحق کا بیان حلفی اورآڈیٹرزکی رپورٹ سمیت غیرملکی پارٹی فنڈنگ کی تفصیلات پر مشتمل جواب جمع کرایا۔
مسلم لیگ ن نے جواب میں درخواست کو من گھڑت اور بے بنیاد قراردیتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن 2002 سے پارٹی تفصیلات جمع کرارہی ہے جماعت کسی ممنوعہ ذرائع سے فنڈنگ حاصل نہیں کررہی۔
بعد ازاں رہنما پی ٹی آئی فواد چودھری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعتیں اپنے اکاونٹس الیکشن کمیشن میں ڈیکلئیر کرنے کی پابند ہیں، لیکن ن لیگ الیکشن کمیشن سے جوتے اتار کر بھاگ رہی ہے،،انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے اپنی پارٹی کو بھی منی لانڈرنگ کے لیے استعمال کیا، خواجہ آصف 1983 میں بنک میں کلرک تھے اور سعد رفیق لاہور میں ویگنوں سے بھتہ لیتے تھے، نواز شریف کے ساتھیوں کی سیاست سے پہلے کمائی ٹکوں میں تھی۔
وکیل پی ٹی آئی نے جواب کی کاپی فراہم نہ کرنے کا بتایا تو ممبر الیکشن کمیشن الطاف ابراہیم قریشی نے مسلم لیگ ن کے وکیل پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے بیس جنوری تک تحریک انصاف کو جواب کی کاپی فراہم کرنے کی ہدایت کی تھی۔ الیکشن کمیشن نے ن لیگ کے وکیل کو پی ٹی آئی کو جواب کی کاپی فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت یکم فروری تک ملتوی کردی۔