سعودی عرب کا سائنس کی دنیا میں انقلابی اقدام

سعودی عرب کا سائنس کی دنیا میں انقلابی اقدام


 (ریاض) سعودی عرب نے پہلا مواصلاتی سیارہ رواں برس فروری میں خلا میں بھیجنے کا اعلان کردیا۔

عرب میڈیا کے مطابق  امریکا کے تعاون سے تیار ہونے والا پہلا مواصلاتی سیٹلائیٹ ایس جی ایس 1 مملکت کے مقامی وقت کے مطابق 5 فروری 2019 کو رات 11 بج کر 55 منٹ پر خلا میں بھیجا جائے گا،وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شاہ عبد العزیز کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی انجینئرز اور امریکی ماہرین کی مشرکہ کوشش سے تیار ہونے والے سیارے کی روانگی کا دن تاریخی ہوگا،اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے انجینئرز نے مشترکہ کاوشوں سے اسے تیار کیا جبکہ سعودی ماہرین کو امریکی کمپنی نے اس کی تربیت بھی فراہم کی۔

العربیہ کی رپورٹ کے مطابق سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے گزشتہ برس اپریل میں سانس فرانسسکو میں واقع امریکی کمپنی لاک ہیڈ مارٹن کا دورہ کیا تھا جس میں انہوں نے مصنوعی سیارے فوق ھام السحب پر تاریخی الفاظ بھی تحریر کیے تھے۔

رپورٹ کے مطابق سیٹلائیٹ کو خلا میں بھیجنے سے سعودی عرب کو ٹیلی ویژن، ٹیلی فون، انٹرنیٹ، مواصلات، ملٹری سیکیورٹی، آفت زدہ علاقوں سمیت دیہی علاقوں میں ٹیلی کمیونیکشن کی فراہمی میں مدد ملے گی۔