چیف جسٹس کے دیکھتے ہی کراچی کے مکینوں کی نعرے بازی


کراچی ( 24نیوز ) چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار آج صبح کراچی رجسٹری پہنچے تو سیدھے عدالت کے باہر اپنی فریاد لئے کھڑے مظاہرین کے پاس پہنچے ، جسٹس ثاقب نثار نے کہا مجھے آپ کے دکھ کااحساس ہے شام چھ بجے تک بیٹھاہوں آپ کی فریاد سنے بغیرنہیں جاﺅں گا ۔
سپریم کورٹ کراچی رجسٹری کے باہرآج صبح سے ہی کراچی کے شہریوں نے مسائل کاانبارلگادیا ، محکمہ تعلیم کے ملازمین اپنی تنخواہیں ملنے اور سرکاری مکان خالی کرنےکانوٹس ملنے پرایف سی ایریا، نارتھ ناظم آ باد ، شادمان ٹاﺅن کے سیکڑوں مکین احتجاجی کتنے اٹھائے سپریم کورٹ کے دروازے پرآگئے ،مظاہرین نے ہاتھوں میں احتجاجی بینرزاورپلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر مختلف نعرے درج تھے۔

یہ بھی پڑھیں:   ایفی ڈرین کوٹہ کیس: حنیف عباسی کو عمر قید کی سزا ، اڈیالہ جیل منتقل
جب چیف جسٹس سپریم کورٹ پہنچے تو مظاہرین نے نعرے بازی بھی کی، چیف جسٹس نے مظاہرین کو یقین دہانی کراتے ہوئے کہا مجھے آپ کے دکھ کااحساس ہے مجھے پتہ ہے کہ آپ صبح چھ بجے سے یہاں کھڑے ہیں آپ کے مسائل بھی سنوں گا۔
مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہم بے گناہ ہیں ہمارے گھر غیر قانونی نہیں ہیں۔ ہمارے پاس مکمل دستاویزات موجود ہیں،محکمہ تعلیم کے ملازمین کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس کے حکم کے باوجود بھی ہماری تنخواہ جاری نہیں ہوئی،مظاہرین کاکہناتھاکہ ہم آج انصاف لیکر ہی جائیں گے ۔