سپریم کورٹ نے پی ایس او، اوگرا اور وزارت پیٹرولیم کی رپورٹ مسترد کردی



کراچی(24نیوز)  سپریم کورٹ نے پیٹرول قیمتوں کے حوالے سے پی ایس او، اوگرا اور وزارت پیٹرولیم کی رپورٹ مسترد کردی۔ متعلقہ اداروں سے پیڑول سستا کرنے کافارمولہ طلب کرلیا۔

عدالتی کٹہرے میں کھڑے فنانس سیکریٹری نے پیٹرولیم مصنوعات کی قمیتیں بڑھنے کا سارا نزلہ پچھلی حکومت پرگرا دیا۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں پیٹرولیم مصنوعات کی قمیمتوں کے تعین کے حوالےسے کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے دوران سماعت پیٹرول قیمتوں کے حوالے سے پی ایس او، اوگرا اور وزارت پیٹرولیم کی رپورٹ مسترد کردی اور آئندہ سماعت سے دو روز قبل تجاویز اور رپورٹ کرنے کا حکم دیدیا۔

دوران سماعت سیکرٹری فنانس عارف خان نے خطرے کی گھنٹی بجاتے ہوئے کہاکہ گزشتہ حکومت نے پیٹرولیم قیمتوں کی قیمت نہیں بڑھائیں۔ گزشتہ حکومت کے فیصلے کا بوجھ عبوری حکومت پر آگیا انہوں نے کہا کہ خسارہ کم کرنے کے لیے مزید قیمت بڑھائی جا سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پی ایس او اور اوگرا مل کر عوام کو بے وقوف بنا رہے ہیں: چیف جسٹس

چیف جسٹس نے کہا کہ اس کا مطلب ہے شہریوں پر مزید عذاب ڈالیں گے جس کا دل چاہتا ہے ٹیکس عائد کر دیتا ہے۔عدالت ٹیکسسز اور قیمتوں کے طریقہ کار سے مطمئن نہیں ہے۔ چیف جسٹس نےمزید کہا کہ یہ بات کئی بارسن چکا ہوں کہا جاتا ہے بھارت کے مقابلے میں قیمتیں کم ہیں آپ کیا کر رہے ہیں لوگوں پر ترس کھانا سکھیں۔

عدالت نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے تمام اداروں سے 5 جولائی تک جامع جواب طلب کرلیا۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔