سمارٹ فون پھٹنے سے ٹیکنالوجی کمپنی کا سربراہ ہلاک ہو گیا

سمارٹ فون پھٹنے سے ٹیکنالوجی کمپنی کا سربراہ ہلاک ہو گیا


  24نیوز : ملائیشیا میں چارجنگ لگا ہوا سمارٹ فون دھماکے سے پھٹ گیا جس کےباعث سرکاری کمپنی کا چیف ایگزیکٹیو آفیسر جاں بحق  ہوگیا۔

 سمارٹ فونز سے ہلاکت کا ایک اور افسوس ناک واقعہ پیش آیا ہے۔ ملائیشیا میں چارجنگ پر لگے ہوئے سمارٹ فون کے پھٹنے سے ایک شخص ہلاک ہوگیا ہے۔ ہلاک شخص کی شناخت 45 سالہ نذرین حسن کے نام سے ہوئی جو وزارت خزانہ کے زیر انتظام ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری کرنے والی کمپنی کریڈل فنڈ کا چیف ایگزیکٹیو آفیسر تھا۔

یہ خبر  ضرور پڑھیں:انسٹا گرام نے یوٹیوب کے مقابلہ میں اہم فیچر متعارف کرا دیا 

ضرور پڑھیں:کھراسچ، 18 جون 2019

 پولیس کے مطابق نذرین کے پاس دو موبائل فون تھے جن میں سے ایک بلیک بیری اور دوسرا ہواوے تھا مگر یہ پتہ نہیں چل سکا کہ دونوں میں سےکونسی کمپنی کے فون سے یہ حادثہ پیش آیا کیونکہ واقعہ کے وقت دونوں فون چارجنگ پر لگے تھے۔ تحقیقات سے پتہ چلا کہ ایک فون دھماکے سے پھٹ گیا جس سے قالین نے آگ پکڑ لی جس نے تیزی سے پورے کمرے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور نذرین کو جان بچانے کا موقع بھی نہ ملا اور وہ زندہ جل کرراکھ ہوگیا۔

نذرین کے کا کہنا ہے کہ نذرین کی موت آتشزدگی سے نہیں ہوئی بلکہ دھماکے سے پھٹنے والے سمارٹ فون سے ہوئی ہے۔

 پڑھنا نہ بھولیں:بلیو وہیل گیم کا ماسٹر مائنڈ گرفتار ,جان لیوا گیم بنانے کی وجہ بھی بتا دی 

واقعہ کی پوسٹ مارٹم رپورٹ بھی آگئی ہے جس کے مطابق چارجنگ کے وقت نذرین موبائل فون کے قریب تھا اور فون دھماکے سے پھٹا جس سے نذرین کی موت ہوئی۔ نذرین  کی بیوہ اور تین بچے اب اکیلے ہیں۔

شازیہ بشیر

Content Writer