بھارت خطے میں امن کیلئے خطرہ قرار

بھارت خطے میں امن کیلئے خطرہ قرار


اسلام آباد(24نیوز) پاکستان نے ایک بار پھر خطے میں امن کیلئے بھارتی رویے کو مایوس کن قرار دے دیا۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل کہتے ہیں بھارت کے ساتھ عددی جنگ میں نہیں پڑنا چاہتے۔ ترجمان نے ایک بار پھر امریکی خدشات کو مسترد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ نے بھارتی میڈیا کی جانب سے اسلام آباد میں بھارتی سفارتکاروں کو ہراساں کئے جانے کے الزامات کو بھونڈا اور بے بنیاد قرار دیا، بھارت نے پاکستان میں اپنے سفیروں کی حراسیت کے حوالے سے کوئی ثبوت نہیں دیئے،ہم اسلام آباد میں غیر ملکی سفیروں کی حفاظت کے ذمہ دار ہیں۔

یہ بھی پڑھیے---فاٹا،بلوچستان کے 11سینیٹرز نے اپوزیشن کے بنچ سنبھال لیے

ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارت نے خواجہ معین الدین چشتی کے عرس کے سلسلے میں پانچ سو تین پاکستانی زائرین کو ویزہ نہ دے کر 1976ءکے معاہدے کی خلاف ورزی کی۔ ایک سوال پر ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کا دورہ امریکہ نجی نوعیت کا تھا مگر انہوں نے امریکی نائب صدر مائک پینس سے ملاقات کی۔ ترجمان نے بتایا کہ اس ملاقات میں واشنگٹن کے پاکستان سفارتخانے کے ملٹری ایڈوائزر بھی موجود تھے۔ ترجمان نے پاکستان میں دہشتگردوں کی پناہ گاہوں سے متعلق امریکی خدشات کو ایک بار پھر بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا۔

انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان بارہا امریکی انتظامیہ کو سرحدی علاقوں میں انٹلی جنس کی بنیاد پر کامیاب کارروائیوں سے متعلق آگاہ کر چکا ہے، فضل اللہ سمیت دیگر طالبان جو افغانستان میں موجود ہیں، کے خلاف امریکی انتظامیہ کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات قابل ستائش ہیں مگر ابھی مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔