گزشتہ پانچ سالوں میں بلوچستان کے 3 وزرا اعلیٰ تبدیل

گزشتہ پانچ سالوں میں بلوچستان کے 3 وزرا اعلیٰ تبدیل


کوئٹہ (24نیوز) بلوچستان میں سال 2013 سے لیکر 2018تک حالات تو نہ بدل سکے، تاہم صوبے میں3وزراعلیٰ ضرور بدلے ۔

بلوچستان میں پانچ سال کے دوران تین وزرائے اعلی اقتدار پر براجمان ہوئے، 2013 کے انتخابات کے بعد ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ وزیراعلیٰ بنے، اپنے دور اقتدار میں تعلیم صحت اور امن و امان پر توجہ کے علاوہ ناراض لوگوں سے مذاکرات کے دعوے بھی لیکن حقیقت میں کچھ ہوتا دکھائی نہیں دیا۔

پڑھنا مت بھولیں: نگران وزیر اعظم کا فیصلہ آج بھی نہ ہوسکا

اڑھائی سالہ قوم پرست معاہدے کے بعد اچانک مری معاہدہ منظر عام پر آگیا، تو مسلم لیگ ن نے پارٹی میں بغاوت کے خدشے کے پیش نظرنواب ثنااللہ خان زہری کو وزیر اعلیٰ کا منصب سونپا گیا، جنوری 2018میں اپنےہی اتحادیوں نے ان کی حکومت کو ناقابل ثناؤ تعریف قرار دیتے ہوئے حکومت کا تختہ الٹ دیا، بغاوت کرنے والوں نے الزام عائد کیا کہ ثنااللہ زہری شریفوں کے بجائے غیروں کو نواز رہے تھے۔

ان ہاؤس تبدیلی کے بعد اقتدار کی دیوی چھ ماہ کیلئے قدوس بزنجو پر مہربان ہوئی، تو باغی ارکان نے نئی جماعت کی بنیاد ڈال دی۔ نئی سیاسی جماعت بلوچستان عوامی پارٹی آئندہ انتخابات میں کامیابی کیلئے پر امید ہے۔