صنعتی صارفین ہوجائیں ہوشیار،اہم خبر



اسلام آباد(24نیوز)چیئرمین ایف بی آر نے ٹیکس ایمنسٹی اسکیم میں رجسٹریشن نہ کرانے والے صنعتی صارفین کے خلاف کارروائی کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے صنعتی صارفین کو ہوشیار کردیا،ان کاکہناتھاکہ ملک بھر میں بجلی کے 3 لاکھ 41 ہزار جب کہ7 ہزار گیس کے صنعتی کنکشن دیے گئے ہیں، لیکن سیلز ٹیکس کی رجسٹریشن صرف 38 ہزار ہے، ایمنسٹی اسکیم میں سیلز ٹیکس کو دو فیصد پر کلیئر کرایا جا سکتا ہے یکم جولائی کے بعد صنعتی کنکشنز کی رجسٹریشن نہ کرانے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

شبر زیدی نے کہا کہ ایس ای سی پی میں ایک لاکھ سے زائد کمپنیاں رجسٹرڈ ہیں جن میں سے50 ہزار سے کمپنیاں ٹیکس ریٹرن فائل کرتی ہیں کمپنیوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے چیئرمین ایس ای سی پی کو خط لکھا ہے،انہوں نے کہاکہ نان فائلر کمپنیوں کو یا چیئرمین ایس ای سی پی اڑائیں گے یا پھر میں ۔

ایف بی آر حکام کا کہناتھا کہ آئندہ بجٹ میں ایسے انڈسٹریل صارفین جن کا بل 8 لاکھ روپے سالانہ ہے یاجن کی سیل ایک کروڑ روپے سالانہ ہے انہیں رجسٹرڈ کیا جائے گا جو لوگ رجسٹرڈ نہیں ہونگے ان کے بجلی کے کنکشن کاٹے جاسکتے ہیں یا بینک اکاؤنٹ منجمد کردئیے جائیں گے۔

ایف بی آر کامزید کہنا تھا کہ ملک میں پانچ کروڑ بینک اکاؤنٹ ہولڈرز ہیں ان میں سے 80 ہزار فائلرز ہیں آئندہ دو سال میں پچاس لاکھ لوگوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کا ہدف رکھا ہے۔