پشاور میں پیشہ ور بھکاریوں کی بھرمار

پشاور میں پیشہ ور بھکاریوں کی بھرمار


پشاور (24 نیوز)  پیشہ ور بھکاریوں کی بھرمار،  انتظامیہ کارروائی سے گریزاں ہے۔

ماہ رمضان کا مبارک مہینہ، پشاور میں بھکاریوں نے ہلہ بول دیا۔ بھکاریوں میں زیادہ تعداد بچوں اور خواتین کی ہیں۔ ان کے ٹھیکیدار  افطاری سے پہلے ان کو مختلف بازاروں میں چھوڑ آتے ہیں۔اسپتالوں، بازاروں، بس اڈوں اور مساجد کے باہر  بھکاریوں کے ڈیروں سے عوام کو شدید پریشانی کا سامنا ہے۔  شہر بھر میں بھکاری صدقہ اور خیرات کے نام پر شہریوں سے پیسے بٹور رہے ہیں جبکہ پولیس سمیت انتظامیہ کارروائی سے گریزاں ہے اور عوام کے پاس ان کا کوئی علاج نہیں ہے۔

بھکاریوں سے تنگ آئے شہریوں کا کہنا ہے کہ اسلام  توبھیک کی اجازت نہیں دیتا لیکن مہنگائی نے بھی کچھ حد تک غریبوں کو ہاتھ پھیلانے پر مجبور کر دیا ہے۔