ڈیرہ اسماعیل خان میں لڑکی کی بے حرمتی سے متعلق کیس کی سماعت


 خیبرپختونخوا (24نیوز): پشاور ہائیکورٹ نے ڈیرہ اسماعیل خان میں لڑکی کی بے حرمتی سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ایڈوکیٹ جنرل خیبرپختونخوا نے عدالت میں کیس کی رپورٹ جمع کرادی۔عدالت نے پولیس کوہر دوہفتے بعد تحقیقاتی رپورٹ ہیومن رائٹس سیل میں جمع کرانے کی ہدایت کردی۔

چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ کی سربراہی میں ڈویژن بنچ نےڈیرہ اسماعیل خان کی شریفہ بی بی کیس کی سماعت کی۔ لڑکی کےوکیل نے متاثرہ خاندان کوتحفظ فراہم کرنے کی استدعا کی۔متاثرہ لڑکی کا کیس لڑنے والی غیرسرکاری تنظیم کی چیئرپرسن کے مطابق ایف آئی آر میں کمزور دفعات شامل کی گئی ہیں، جبکہ متاثرہ خاندان پر کیس واپس لینےکےلئے مختلف طریقوں سے دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

عدالت میں آئی جی خیبرپختو نخوا کی جانب سے ایڈوکیٹ جنرل نے رپورٹ بھی پیش کی۔رپورٹ کے مطابق متاثرہ لڑکی اور اس کےاہل خانہ کو سیکورٹی فراہم کردی گئی ہے۔رپورٹ میں ویڈیو بنانے والے شخص کو ایف آئی آر میں نامزد کرنے اور مرکزی ملزم کی گرفتاری کی بھی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔