ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما کے سنسنی خیز انکشافات

ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما کے سنسنی خیز انکشافات


کراچی(24نیوز)  ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں ملوث ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما نے دوران تفتیش سنسنی خیز انکشاف کئے ہیں،ملزم نے انسٹھ افراد کے قتل کا اعتراف کرلیا۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رئیس مما سے تفتیش کی رپورٹ ٹوینٹی فورنیو نیوزنے حاصل کرلی۔  رئیس مما نے 59 افراد کے قتل میں ملوث ہونے کا اعتراف  کیا ہے۔رئیس نے  اعتراف کیا کہ اسے ان کارروائیوں کے لیے احکامات ایم کیو ایم لندن کی جانب سے ملتے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: عدالت نے پرویز خٹک کو مزید مہلت دے دی 

ملزم نے انکشاف کیا کہ اسے 2010 میں ٹارگٹ کلنگ ٹیم کا انچارج بنایا گیا۔ 12 مئی کو بلوچ کالونی کے قریب فائرنگ سے 8 افراد کو قتل اور متعدد کو زخمی کیا، آفاق احمد سے جیل میں ملنے والے 5 رہنماؤں کو قتل کیا۔جئے سندھ کے کارکنان پر فائرنگ کی  جس کے نتیجے میں 4 افراد  ہلاک ہوئے تھے۔ایس پی شاہ محمد ، ڈاکٹر دلشاد کو قتل کیا۔کے ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر عبدالجبار منگی کو قتل کرنے کا انکشاف کیا۔اس کے علاوہ کورنگی میں کوچ پر فائرنگ سے 4 پولیس اہلکاروں سمیت 5 افراد کو ہلاک کرنے کا بھی انکشاف کیا۔

پڑھنا مت بھولیں: کرپٹ سیاستدانوں کو باکسرعامرخان کے حوالے کروں گا: عمران خان

واضح رہے کہ گزشتہ برس 25 دسمبر کو رئیس مما کو انٹرپول کے ذریعے ملائیشیاء سے گرفتار کیاگیا تھا۔ملزم پہلے ہی اعتراف کرچکا ہے کہ اس کی ٹیم میں 40 شوٹرز تھے۔