2017 میں کھیل کے میدان آباد ہوئے،غیر ملکی کھلاڑیوں نے پاکستان کا رخ کیا


لاہور (24نیوز)  پاکستان میں دہشت گردی کےسائے چھٹنے سے سال 2017 کھیلوں کیلئے خاصا اچھا رہا، کھیلوں کے بین الاقوامی مقابلوں کیلئے کئی غیر ملکی کھلاڑیوں اور ٹیموں نے یہاں کا رخ کیا، کوئی مانے نہ مانے لیکن مہمان کھلاڑیوں نے اعتراف کیا کہ پاکستان کھیلوں کیلئے بہترین اور محفوظ ملک ہے۔

تفصیلات کے مطابق دہشت گردی کے عفریت سے چھٹکارے کے بعد 2017 پاکستان میں کھیلوں کے بین الاقوامی مقابلوں کیلئے نیک ثابت ہوا، لاہور میں پی ایس ایل فائنل نے دنیا کو مثبت پیغام دیا، اس سال 20 غیرملکی پروفیشنل ریسلر پہلی بار پاکستان آئے۔

امن سے عبارت اس سال کے دوران اسلام آباد میں بیڈ منٹن کے عالمی مقابلے بھی ہوئے، انٹرنیشنل ٹینس میچز بھی بحال ہوئے، ڈیوس کپ ایشیا اوشیانا گروپ ٹو ٹائی بھی اسلام آباد میں ہی کھیلا گیا، اس سے قبل غیر ملکی کھلاڑی پاکستان آنے سے گریزاں تھے۔

ملک قومی کھیل ہاکی 2017 میں بھی عدم توجہی کا شکار رہا، نہ تو پاکستان میں نہ ہی بیرون ملک کوئی پاکستانی کھلاڑی اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا سکا,اسلام آباد میں دیگر کھیلوں کی طرح شہید بے نظیر بھٹو انٹرنیشنل ٹینس ٹورنامنٹ بھی کرایا گیا، اسکواش کے بین الاقوامی مقابلے بھی ہوئے۔