کلبھوشن یادیو سے والدہ، بیوی کی ملاقات کا معاملہ طے نہ ہو سکا

کلبھوشن یادیو سے والدہ، بیوی کی ملاقات کا معاملہ طے نہ ہو سکا


اسلام آباد (24 نیوز) کلبھوشن یادیو کی والدہ اور اہلیہ سے ملاقات بارے پاکستان کی بھارت کومعلومات فراہم کرنے کی ڈیڈ لائن، بھارتی ہائی کمیشن کو آگاہ کر دیا گیا، جاسوس کی والدہ اوراہلیہ چاہیں تومیڈیا سے بات کر سکیں گی۔

اعلی سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان نے کلبھوشن کی اہل خانہ سے ملاقات کی تمام تیاری مکمل کرلی ہے جبکہ بھارت نے اپنے جاسوس کلبھوشن یادیو کی والدہ اوراہلیہ سے ملاقات کرانے کے معاملہ پر ٹال مٹول کرتے ہوئے تاحال معلومات فراہم نہیں کیں۔ بھارت کی جانب سے یہ نہیں بتایا گیا کہ وہ کس کب اور کس فلائٹ کے ذریعہ اسلام آباد پہنچیں گی۔

ذرائع کے مطابق کلبھوشن کے دوبچے ہیں لیکن بھارت کی جانب سے یہ واضح نہیں کیا گیا کہ وہ کلبھوشن ہے یا حسین مبارک پٹیل؟ ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے معلومات کی فراہمی کے لیے 23 دسمبر یعنی آج رات گئے تک کی حتمی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے بھارتی ہائی کمیشن کو مطلع کردیا ہے۔

سفارتی ذرائع کی جانب سے سامنے آنے والی معلومات میں کہا گیا ہے کہ آج معلومات نہ آئیں تو 25 دسمبر کو ملاقات کروانا مشکل ہوجائےگا۔ کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ کو 24 سے 26 دسمبر کے ویزے جاری کردئیے گئے۔ ویزے صرف اسلام آباد کیلئے جاری کیے گئے ہیں۔ ملاقات کا دورانیہ 15 منٹ سے 1 گھٹے تک مشتمل ہو گا۔ ملاقات کے دوران بھارتی ہائی کمیشن کا ایک سفارت کار موجود ہوگا جس کی تفصیلات کا تبادلہ تاحال نہیں کیا جا سکا۔

24 نیوز کو میسر معلومات کے مطابق بھارتی جاسوس کی والدہ اوراہلیہ چاہیں تو میڈیا سے بات کر سکیں گی۔ کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ سے ملاقات آخری نہیں ہو گی۔

واضح رہے کہ کلبھوشن ایک جاسوس، دہشتگرداورتخریب کار ہے، جس کے ثبوت موجودہیں۔ اُس کے درجنوں پاکستانی سہولت کار بھی گرفتار کیے ہیں۔۔بھارتی جاسوس کی رحم کی اپیل پرپہلے آرمی چیف اوربعد میں صدر پاکستان نے فیصلہ کرناہے۔