سوڈان ؛ اسمبلیاں تحلیل ،ایک سال کیلئےہنگامی حالت نافذ

سوڈان ؛ اسمبلیاں تحلیل ،ایک سال کیلئےہنگامی حالت نافذ


خرطوم (24نیوز)سوڈان کے صدرنے اسمبلیاں تحلیل کر کے ملک میں ایمرجنسی لگا دی، صدر عمر البشیر کے خلاف مظاہرے شروع ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق سوڈان کے صدرنعمر البشیر اسمبلیاں تحلیل کر کے ملک میں ایک سال کے لیے ہنگامی حالت نافذ کرنے کا اعلان کر دیا,قومی وفاقی حکومت اور ریاستی حکومتوں کو بھی تحلیل کرتے ہوئے ٹکنوکریٹس پر مشتمل کابینہ تشکیل دے دی ہے,جس پر سوڈانی صدر نے احتجاج کنندگان سے مطالبہ کیا کہ وہ بات چیت کی میز پر آئیں تا کہ ملک کو مسائل سے بچایا جا سکے۔

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

ذرائع کاکہناتھاکہ عمر البشیر نے صدارتی آرڈیننس جاری کرتے ہوئے وفاقی کابینہ کو تحلیل کر دیا اور ٹیکنوکریٹس پر مشتمل کابینہ کا اعلان کیا،سوڈان کے صدرکا کہنا تھا کہ احتجاجی مظاہروں کے دوران ہلاک ہونے والوں کے حوالے سے شفاف تحقیقات کرائی جائیں گی، انہوں نے ریاستوں پر فائز ملازمین کو بھی دستبردار کردیا،ایمرجنسی کے اعلان کے بعد لوگ سڑکوں پر نکل آئے۔ 

پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مجوزی آئینی ترامیم پر غور ملتوی کر دیں، اپوزیشن جماعتوں پر بھی زور دیا کہ وہ بات چیت کے عمل میں شامل ہوں،سوڈانی صدر نے واضح کیا کہ تشدد اور ہنگامہ آرائی سے ملک کا بحران ہرگز حل نہیں ہو گا۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER