سی پیک کا کریڈٹ آصف زرداری کو جاتا ہے!

سی پیک کا کریڈٹ آصف زرداری کو جاتا ہے!


کراچی(24نیوز)مسلم لیگ ن کی حکومت سی پیک کاکریڈٹ ایک بارپھراپنے نام کرنیکی کوشش کررہی ہے، لیکن حقیقت یہ ہے کہ منصوبہ 2013 میں اس وقت کے صدرآصف علی زرداری کاکارنامہ تھا۔ آئیے تاریخ کوپھردہراتے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق کہا جاتا ہے کہ ترقی سڑک پر چل کر آتی ہے، سڑک کی تعمیر کا معاہدہ پاکستان اور چین جیسے دو برادر ممالک میں ہو، تو اقتصادی ترقی کی رفتار اور معیار کا اندازہ بخوبی کیا جا سکتا ہے،مسلم لیگ ن کی حکومت پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کا کریڈٹ لینے کی بھرپور کوشش کر رہی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ یہ منصوبہ 2013 میں سابق صدر آصف علی زرداری کا کارنامہ تھا، جی ہاں! سابق صدر آصف زرداری نے چینی وزیراعظم کے ساتھ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کی مفاہمتی یادداشت پر دستخط کئے۔ دونوں ملکوں کے درمیان سی پیک منصوبہ شروع کرنے کی تقریب 22 مئی 2013 کو اسلام آباد میں ہوئی تھی۔
گوادر پورٹ اور اس سے آگے سمندری راستے سے دنیا بھر تک رسائی جو کبھی ایک خواب تھی، آج اقتصادی راہداری کے ذریعے اس خواب کو شرمندہ تعبیر ہونے میں اب زیادہ دیر نہیں لگے گی۔ جس کا سہرا جاتا ہے۔