نواز شریف،مریم اور کیپٹن صفدرپھر نیب عدالت پیش،دو گواہوں کے بیانات قلمبند

نواز شریف،مریم اور کیپٹن صفدرپھر نیب عدالت پیش،دو گواہوں کے بیانات قلمبند


اسلام آباد(24نیوز)احتساب عدالت میں شریف فیملی کے خلاف ریفرنس کی سماعت میں آج دو گواہان کے بیان قلمبند کئے گئے، آئندہ سماعت پر مزید دو گواہوں کو طلب کر لیا گیا، سابق وزیراعظم کی 14ویں، مریم نواز کی 16 ویں اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی 18ویں پیشی تھی۔
تفصیلات کے مطابق شریف خاندان کے خلاف تین نیب ریفرنسز کی سماعت ہوئی،، العزیزیہ ریفرنس کی 25 ویں، فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس کی 22 ویں اور لندن فلیٹس ریفرنس کی 21 ویں سماعت احتساب عدالت کے جج محمد نے کی۔ سابق وزیراعظم کی 14ویں، مریم نواز کی 16 ویں اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی آج 18ویں پیشی تھی۔
ملزموں کی موجودگی میں دو گواہان غلام مصطفی اور عزیر ریحان کے بیانات قلمبند کیے گئے جبکہ تیسرے گواہ آفاق احمد کی سپریم کورٹ سے دستاویزات نہ ملنے کے باعث کا بیان قلمبند نہیں ہو سکا۔
نجی بنک کے ریجنل منیجر آپریشنز غلام مصطفی کا بیان قلمبند اور جرح مکمل کی گئی،گواہ کا کہنا تھا کہ بائیس اگست 2017کو نجی بنک آفیسر یاسر شبیر کے ساتھ نیب راولپنڈی میں پیش ہوا،،،،یاسر شبیر نے نواز شریف کے بنک اکاونٹسُ کی تفصیلات تفتیشی افسر کو پیش کیں،، تفتیشی افسر کو دیئے گئے بیان میں ہل میٹل کا ذکر نہیں کیا، نواز شریف سے متعلق ہل میٹل کا کوئی بھی ریکارڈ پیش نہیں کیا۔
ویڈیو دیکھیں


خواجہ حارث نے کہا ضمنی ریفرنس ہم نے پڑھنا ہے، ہمیں وقت دیا جائے، جس پر نیب کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کی ڈائریکشن ہے کہ کیس کو 6 ماہ میں مکمل کیا جائے، نیب ٹیم کا کہنا تھا کہ اگلی سماعت پر ضمنی ریفرنس کے گواہان کو طلب کر لیتے ہیں۔
احتساب عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید دو گواہ آفاق احمد اور وقار احمدکو طلب کرتے ہوئے سماعت 30 جنوری تک ملتوی کر دی۔