تبدیلی سرکار نے بھی بسنت کے سامنے ہاتھ کھڑے کر دیئے

تبدیلی سرکار نے بھی بسنت کے سامنے ہاتھ کھڑے کر دیئے


لاہور(24نیوز) پنجاب حکومت نے یوٹرن لے لیا۔ پہلے خوشخبری اور پھر انکار کردیا۔

جی ہاں پنجاب حکومت نے بسنت نہ منانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے چند روز پہلے بسنت منانے کی خوشخبری دی تھی۔ مگر آج پنجاب حکومت نے بسنت نہ منانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کا کہنا تھا کہ اس سال بسنت نہیں منائی جائے گی اور پتنگ بازی پر پابندی کے فیصلے پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے گا، صوبائی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ پرامن بسنت منانے کے لیے کم از کم 6 ماہ کی تیاری کی ضرورت ہے. بسنت نہ منانے کا فیصلہ عوامی مفاد میں کررہے ہیں،ادارے ذمے داریاں پوری کریں تو ایسی سرگرمیاں ہوسکتی ہیں. انہوں نے کہا کہ بسنت نہ منانے کے فیصلے سے متعلق ہائیکورٹ میں باقاعدہ جواب جمع کرایا جائے گا۔

گزشتہ ماہ 18 دسمبر کو وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے اعلان کیا تھا کہ فروری 2019 میں بسنت منائی جائے گی اور اس ضمن میں تمام تر حفاظتی تدابیراختیار کرنے کی کوشش کی جائے گی، حکومتی اقدام کےخلاف لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی جس میں بسنت منانےکے اقدام کو کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی تھی۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔