"سانحہ ساہیوال پر سیاسی پوائنٹ اسکورنگ نہ کی جائے"



اسلام آباد (24 نیوز) وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کہتے ہیں کہ سانحہ پر ایوان میں دو روز سے بحث ہورہی ہے آج اسے اٹھانا مناسب نہیں تھا، جےآئی ٹی رپورٹ کےمطابق خلیل کا خاندان بےگناہ تھا، ساہیوال میں خلیل کی فیملی کو ناحق مارا گیا، وزیراعظم نےکہا ذمہ داروں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی،شاہ محمودکی تقریر کے دوران اپوزیشن کا شور شرابہ۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے قومی اسمبلی میں ا ظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ساہیوال واقعہ دل دہلادینے والا ہے، دو دن سے اس افسوسناک واقعےپر ایوان میں بحث ہورہی ہے،  آج ساہیوال واقعے کو اٹھانا مناسب نہیں تھا لیکن اپوزیشن نے اٹھایا ،شاہ محمود قریشی کی تقریر کے دوران ایوان میں اپوزیشن کا شور شرابا، ساہیوال واقعے کی فوری طور پر مذمت کی گئی۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے وزیر اعلی پنجاب کے دفاع  کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ صاحب موقع پر پہنچے،ج ے آئی ٹی نے اپنا کام مکمل کیا، ماضی میں حکومتیں واقعات کو دبانے کی کوشش کرتی رہیں۔ کسی قصوروار کو تحفظ دینے کا ارادہ تھا نہ ہے، ہم کسی کی پردہ پوشی نہیں کرنا چاہتے، ہم ان کیمرا بریفنگ دینے کیلئے بھی تیار ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس واقعے کےحقائق عوام کے سامنے پیش کیے جائیں گے جو قصوروار ہے اسے سزاد ی جائے گی، واقعے کا مقدمہ انسداددہشت گردی عدالت میں چلایا جائے گا، ایف آئی آر درج کی گئی، انویسٹی گیشن کے نتیجے میں کارروائی کا فیصلہ کیاگیا، سانحہ ساہیوال پر پولیس افسران کو ہٹایاگیاکسی قصور وار کو نہیں بخشا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ سانحہ ساہیوال پر سیاسی پوائنٹ اسکورنگ نہ کی جائے۔ حقائق سے پردہ پوشی نہیں کی جائے گی، فیئر ٹرائل ہوگا جبکہ متاثرہ خاندان کی کفالت اور ان کی حفاظت کی جائے گی۔  ذیشان سےمتعلق کہا گیاہےمزیدتحقیقات کی ضرورت ہے، خلیل اور اس کا خاندان بے گناہ تھاتحقیقات جاری ہے  تاکہ مکمل حقائق سامنے آسکیں۔