مریم نواز کی زبان پارٹی کو بند گلی میں لے جا رہی ہے: چودھری نثار


اسلام آباد (24 نیوز) سابق وزیر داخلہ چودھری نثار نے ایک بار پھر نواز شریف کو کھری کھری سنا دیں۔ دونوں سیاسی رہنماؤں کے درمیان لفظی جنگ کا آغاز بہت پہلے ہوا۔

مریم نواز کی جانب سے سنائے گئے شعروں اور اشاروں، کنایوں میں کی گئی باتوں کے بعد وہ چپ نہ رہ سکے اور پھٹ پڑے۔انھوں نے کہا کہ میاں صاحب! احسان انسان نہیں، اللہ تعالیٰ انسانوں پر کرتا ہے۔ مریم نوازکی زبان کی وجہ سے پارٹی بند گلی میں جا رہی ہے۔ نوازشریف کے اشعار، کلمات اور مریم نواز کے بیانات زبان کھولنے پر مجبور کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھئے: میاں نواز شریف نے بالآخر شکست مان لی

سابق وزیرخلہ چودھری نثار علی خان نے ایک بیان میں کہا کہ ایک سال تک انہوں نے برداشت کیا اور کوشش کی کہ ردعمل نہ دیں مگر افسوس کہ پچھلے آٹھ دس ماہ میں ایک مخصوص طرف سے ان کی ذات کو مختلف طریقوں سے نشانہ بنایا جاتارہا۔

انھوں شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ کبھی خود ساختہ لطیفے، کبھی طنزیہ جملے اور کبھی نہ ہونے والے واقعات کا حوالہ دے کر ان کی ذات کو نشانہ بنایا گیا۔جب کچھ نہ بنا تو چند منظور نظر صحافیوں سے طے شدہ سوالات کرا کے اشارۃً ان کی تضحیک کی کوششیں کی گئی۔ اس کا واضح مہرہ صرف ایک شخص تھا جس کا مسلم لیگ ن سے کوئی نظریاتی تعلق ہے نہ سیاسی ناتا مگر کٹھ پتلی کبھی اپنی طاقت پر نہیں ناچتی۔

چودھری نثار نے کہا کہ میاں صاحب! احسان انسان نہیں کرتا، اللہ تعالیٰ انسانوں پر کرتا ہے، اگرآپ سمجھتے ہیں کہ آپ نے لوگوں پر احسان کیے ہیں تو بہت سارے لوگوں نے آپ کو بھی اس مقام پر پہنچانے میں مدد اور احسان کیا ہوگا، آپ کو ان کا بھی احسان مند ہونا چاہیے۔

انھوں نے کہا کہ مریم نواز کی تندوتیز زبان کی وجہ سے پارٹی ایک بند گلی میں جا رہی ہے۔ وہ اِس کی بات کا اسی پیرائے میں جواب دے سکتے ہیں مگر اُن کے دل میں اُس کے خاندان کا احترام ہے۔ اس لیے صرف منیر نیازی کے شعر کے ذریعہ اتنا کہوں گا کہ"ادب کی بات ہے ورنہ منیر سوچو تو, جو شخص سنتا ہے وہ بول بھی تو سکتا ہے".

پڑھنا نہ بھولئے: پی آئی اے نجکاری کیلئے ن لیگ حکومت کی پھر سے تیاریاں

مزید وضاحت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اپنے اوپر یہ پابندی صرف آج کے بیان تک لگائی ہے۔ اگر مہروں اور کٹھ پتلیوں کے ذریعہ مجھ پر الزامات کا سلسلہ جاری رہا تو میں تفصیلی جواب دوں گا۔