سندھ ہائیکورٹ نے میڈیکل یونیورسٹیز میں دوباری داخلہ ٹیسٹ لینے سے روک دیا

سندھ ہائیکورٹ نے میڈیکل یونیورسٹیز میں دوباری داخلہ ٹیسٹ لینے سے روک دیا

کراچی(24نیوز) سندھ ہائیکورٹ نے میڈیکل یونیورسٹیز میں دوبارہ داخلہ ٹیسٹ لینے سے روک دیا،عدالت نے ریمارکس دیئے کہ جب تک کیس کا فیصلہ نہیں ہوجاتا ، حکومت این ٹی ایس کے لئے نئی تاریخ کا اعلان نہ کرے۔


تفصیلات کے مطابق میڈیکل یونیوسرٹیز میں  داخلہ کے لئے این ٹی ایس ٹیسٹ کا پرچہ آوٹ ہونے کا معاملہ سندھ ہائیکورٹ میں درخواست پر سماعت،عدالت نے استفسار کیا کہ این ٹی ایس کے معاملے پر وزیراعلیٰ سندھ کی تحقیقاتی کمیٹی کیا فائنڈنگز ہیں، سیکریٹری صحت فضل اللہ پیچوہو نے موقف اپنایا کہ دسمبر کے پہلے ہفتے تک تحقیقات مکمل کرلی جائیں گی اور داخلہ ٹیسٹ دوبارہ لیئے جائیں گے، ادھر این ٹی ایس کے وکیل نے موقف اپنایا کہ کسی بھی طالبِ علم کی جاںب سے پرچہ آوٹ ہونے کی شکایت نہیں ملی، این ٹی ایس کو متنازعہ بنایا جارہا ہے،عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کسی شخصیت کے بارے میں میں فضول بات نہ کریں، عدالت نے تحقیقات مکمل نہ ہونے پر برہمی کا اظہار کیا،اور سندھ حکومت کو میڈیکل یونیورسٹیز میں داخلہ کے لئے دوبارہ ٹیسٹ لینے سے روک دیا۔

عدالت نے حکم دیا کہ جب تک کیس کا فیصلہ نہیں ہوجاتا ، دوبارہ ٹیسٹ کی تاریخ کا اعلان نہ کریں کیس کی مزید سماعت 29 نومبر تک ملتوی کردی گئی۔