کرپشن کے الزام میں گرفتار شہزادوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کا دعویٰ

کرپشن کے الزام میں گرفتار شہزادوں کو تشدد کا نشانہ بنانے کا دعویٰ


 ریاض(24نیوز): برطانوی میڈیا نےکھرب پتی پرنس ولیدبن طلال سمیت زیر حراست سعودی شہزادوں کو الٹا لٹکا کر تشدد کا نشانہ بنانے کا دعویٰ کر دیا. اثاثوں کی تفصیلات حاصل کرنے کا حربہ یا اعتراف جرم کرانے کی کوشش۔ سعودی عرب میں کرپشن کے الزام میں گرفتار شہزادوں کو الٹا لٹکا  کر تشدد  کیا جا رہا ہے.

یہ دعویٰ کیاہےبرطانوی اخبار ڈیلی میل نےکیا، اخبار کے مطابق کھرب پتی پرنس ولیدبن طلال کو بھی الٹا لٹکا کرتفتیش کی گئی۔رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا کہ گرفتار افراد کو عمر بھر سیلوٹ کرنے والے سعودی اہلکاروں کو جان بوجھ کر ذمہ داری نہیں دی گئی،امریکی کنٹریکٹر یہ کام کر رہے ہیں۔ شہزادوں کے لیے جیل قرار دیئے گئے فائیو اسٹار ہوٹل کے باہر سعودی اور اندر نجی سیکیورٹی کمپنی کے اہلکار تعینات ہیں۔ اس سے پہلے یہ اطلاعات بھی آچکی ہیں کہ سعودی حکمران گرفتار شہزادوں کو اپنے اثاثے حکومت کو دینے پر رہا کرنے کی پیشکش کرچکے ہیں۔