متحدہ اپوزیشن کا کل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ

متحدہ اپوزیشن کا کل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ


اسلام آباد(24نیوز) متحدہ اپوزیشن نے حکومت کو ٹف ٹائم دینے کے لئےکل جماعتی کانفرنس بلانے کا فیصلہ کرلیا۔ مولانا فضل الرحمان نے پیپلز پارٹی اور ن لیگ سمیت حزب اختلاف کی تمام جماعتوں سے رابطے شروع کر دیئے۔ 

سیاست کےبڑوں کی بڑی بیٹھک کا امکان ، مولانا فضل الرحمان نے سیاسی رابطے تیز کردیئے۔پی ٹی آئی کی حکومت نہ خود چل سکتی ہے نہ ملک چلاسکتی ہے۔  آصف زرداری کے بیان کےبعد اپوزیشن کےجسم میں جان پڑگئی۔ حکومت کو ٹف ٹائم دینے کے لئےمولانا فضل الرحمان نےکل جماعتی کانفرنس بلانے کی تجویز دی ہے۔ اے پی سی اگلےہفتے بلائےجانےکا امکان ہے اس سلسلے میں تاریخ ،وقت اور مقام کا تعین حزب اختلاف کی جماعتیں مل کر کریں گی۔

مولانا فضل الرحمان اور بعض لیگی رہنما نوازشریف اورآصف علی زرداری کواکٹھےبٹھانےکیلئےسرگرم ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق اے پی سی سے پہلےدونوں قائدین کے درمیان ملاقات کا امکان ہے۔ اس حوالے سےدونوں جماعتیں گرین سگنل دے چکی ہیں۔

ذرائع کے مطابق اے پی سی میں حکومت مخالف اقدامات پر مشاورت کی جائے گی اور مشترکہ لائحہ عمل ترتیب دیا جائے گا ۔  آصف زرداری کی حکومت مخالف قراردادمنظور کرنے کی تجویز کو بھی ن لیگ نے سراہا اور موجودہ سیاسی صورتحال میں اسے قابل عمل قراردیا ہے۔ دوسری جانب وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری کاکہنا ہے اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی اڈیالہ جیل میں ہوگی۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔