صدر کے پروٹوکول کیخلاف شہریوں کو اکسانے والے شہری پر مقدمہ درج


کراچی(24نیوز) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا پروٹوکول توڑنے اور شہریوں کو غلط کام پر اکسانے والے نامعلوم شہری کے خلاف شارع فیصل تھانے میں مقدمہ درج کرلیا گیا، صدر مملکت نے سوشل میڈیا پر مقدمہ درج کرنے کو غلط تو قرار دے دیا ۔
گزشتہ روز شہر قائد کی اہم ترین سڑک شارع فیصل کو جب صدر مملکت کی آمد کے لئے بند کیا گیا تو ایک نامعلوم شہری موبائل پر وڈیو بناتا ٹریفک پولیس اہلکاروں سے الجھ پڑا۔نامعلوم شہری نے پہلے ٹریفک پولیس اہلکار سے سوال کیا کہ سڑک کیوں بند ہے اور پھر چیخنا شروع کردیا، شہری سخت لہجے میں ٹریفک پولیس سے گاڑی ہٹانے کا بولتا رہا اور عوام کو پولیس کی نہ سننے پر اکساتا رہا۔نامعلوم شہری نے غصے میں قوم کو بھی برا کہا اور بالاخر شہریوں کو اکسانے میں کامیاب ہوا اور انتظار کرتے شہریوں نے گاڑیاں سڑک پر دوڑا دیں جس کے بعد پولیس نے روکنے کی کوشش کی تو بدتمیزی اور ہاتھ اٹھانے کا الزام لگا دیا گیا۔
پولیس نے سرکاری کام میں مداخلت پر نامعلوم شہری کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے اور حکام کا کہنا ہے کہ وی آئی پی پروٹوکول ختم کرنے کے حکومت باقاعدہ احکامات جاری کرے تو سڑک بند نہیں کریں گے ورنہ سڑک بند کرنا پولیس اہلکار کی ڈیوٹی ہے۔ شہری آواز بلند کریں لیکن پولیس کی تذلیل اور قانون ہاتھ میں نہ لیں۔

دوسری جانب صدر مملکت عارف علوی نے ٹوئٹر پیغام میں مقدمہ درج کرنے کی مذمت تو کردی ہے لیکن اب تک مقدمہ ختم کرنے کے کوئی احکامات جاری نہیں کیے گئے ہیں۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔