امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے: وزیر اعظم


لاہور(24نیوز)  وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم سعودی عرب سے بھیک مانگنے نہیں گئے تھے، انھوں نے کہا کہ ہاکستان بھارت کی دھمکیوں میں نہیں آنے والا، اگر بھارت باز نہ آیا تو بھارت یہ جان لے کہ یہاں پوری قوم اکٹھی ہے۔

لاہورمیں سرکاری ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہندوستانی قیادت کے تکبر کے پیچھے غلط فہمی ہے، انھوں نے کہا کہ ہماری   امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، دوستی دونوں ملکوں کی عوام کے لیے بہتر ہے۔

عمران خان نے کہا کہ  پالیسیاں حکومت بناتی ہے جبکہ اس پرعملدرآمد بیورکریسی کرتی ہے۔ ہمیں سرکاری ملازمین کی حمایت چاہئے، حکومت چین آف کمانڈ کےاصول پر کام کرے گی، بیوروکریسی کے کام میں مداخلت نہیں کی جائَے گی۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نیا پاکستان نئی سوچ کا نام ہے، ہم بیوروکریسی کوغیر سیاسی کریں گے، اگر گورنس ٹھیک ہوگئی توپاکستان دنیا میں بہت آگے نکل جائے گا ۔انھوں نے کہا انہیں بہت تکلیف ہوئی ایک پولیس افسر اور دو افسران پبلک میں چلےگئے،  آئندہ ایسی حرکت برداشت نہیں کریں گے۔  انہوں نے پولیس افسران سے کہا کہ وہ تھانہ کلچر تبدیل کریں ۔ وزیراعظم نے کھلی کچہری لگانے اور پی ایم ہاؤس میں شکایات سیل بنانےکا بھی اعلان کیا۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔