چیف جسٹس کا نابینا وکیل کی اپیل کا نوٹس،لاہور ہائیکورٹ کو دوبارہ انٹرویو لینے کا حکم


اسلام آباد(24نیوز) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے بینائی سے محروم وکیل یوسف سلیم کا دوبارہ انٹرویو لینے کا حکم دے دیا ۔

 25 سالہ سلیم یوسف جوہر ٹاؤن لاہور کا رہائشی ہے اور بینائی سے محروم ہے انھوں نے پنجاب یونیورسٹی سے ایل ایل بی کی ڈگری حاصل کی اور گولڈ میڈلسٹ رہے۔ ڈگری کے 3 سال بعد یوسف سلیم نے سول جج کا امتحان دیا جس میں وہ پہلے نمبر پر رہا، لیکن انٹرویو میں فیل کردیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما کے سنسنی خیز انکشافات 

تاہم سلیم یوسف کا کہنا ہے کہ زندگی رکتی نہیں وہ ہمت نہیں ہاریں گے انھوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی کہ اس کا دوبارہ انٹرویو لیا جائے جس کے بعد آج جسٹس ثاقب نثار نے نوٹس لیتے ہوئے اس دوبارہ موقع دینے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ نابینا وکیل یوسف سلیم کو سیلیکشن کمیٹی نے سول جج کے عہدے کےلئے مسترد کیا تھا۔