جماعت اسلامی ،پی ٹی آئی کو گھر میں شسکست دینے کیلئے تیار


لاہور( 24نیوز ) جماعت اسلامی کے امیر سینیٹر سراج الحق کے لہجے میں اچانک تلخی کیوں آگئی؟پانچ سال تک خیبر پی کے حکومت میں رہنے کے بعد پی ٹی آئی اور جماعت اسلامی دونوں کی طرف سے تندو تیز جملوں کا تبادلہ کیوں؟آہستہ آہستہ سب راز کھلنے لگے۔

جماعت اسلامی کے منصورہ لاہور میں اجلاس میں تازہ سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا جارہا ہے، پی ٹی آئی کے ساتھ اتحاد پر خصوصی غور کیا جارہا ہے، پی ٹی آئی کے ساتھ رہنا ہے یا نہیں اجلاس کے بعد واضح ہوجائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:سراج الحق کے عمران خان پر تابڑ توڑ حملے،وجہ سامنے آگئی

ذرائع کا کہنا ہے کہ جماعت اسلامی خیبر پی کے حکومت سے الگ ہوسکتی ہے،جے آئی یوتھ کے سیکرٹری اطلاعات کے مطابق جماعت اسلامی اب مزید پی ٹی آئی کے ساتھ نہیں چل سکتی،کارکنوں کی طرف سے بھی قیادت پر خیبر پی کے حکومت سے علیحدگی کیلئے دباؤ ہے امید ہے قیادت کارکنوں کے حق میں فیصلہ دے گی۔

یہ بھی پڑھیں:پی ٹی آئی کا یوٹرن، خیبرپختونخوا حکومت کا بجٹ پیش کرنے کا فیصلہ

اگر جماعت اسلامی صوبائی حکومت چھوڑتی ہے تو پرویز خٹک حکومت آخری بجٹ نہیں پیش کرپائے گی کیونکہ اس وقت وزیر خزانہ جماعت اسلامی کا ہے،قیادت کی طرف سے حکم ملا تو وزیر خزانہ مظفر سید بھی مستعفی ہوجائیں گے،اس طرح قبل از وقت اسمبلی ٹوٹنے کا بھی امکان ہے۔