اگر آپ ذہنی دباؤ کا شکار ہیں تو یہ خبر پڑھ لیں


لاہور(24نیوز) ہم سب روزانہ مختلف طرح کےذہنی دباؤسے گزرتے ہیں،نوکری ہو ،گھرہویادوست احباب ہرجگہ ہمیں کسی نہ کسی پریشانی کاسامناکرناپڑتاہے۔مسلسل ذہنی دباؤاورتھکاوٹ آپ کوڈپریشن اوردوسری بیماریوں میں بھی مبتلاکرسکتاہے۔یہی ذہنی دباؤخوشگوارزندگی میں زہرقاتل کاکرداراداکرتے ہوئےانسان کوذہنی اذیت میں بھی مبتلاکرسکتاہے۔
پریشان نہ ہوں کیوں کہ ایک پریشانی کئی پریشانیوں کوجنم دیتی ہے۔ ذہنی دباؤاورٹینشن بھگانے کے لیےسال میں ایک دفعہ پرفضا مقامات کارخ کیاجاتاہے۔لیکن یہ کافی نہیں ، ہمیں ٹینشن اوردباؤسے چھٹکارے کے دوسرے راستے بھی ڈھونڈنے چاہیں جوسال بھرہمیں پریشانی سے محفوظ رکھیں۔ہمارے پاس آپ کے لیے کچھ مفید ٹپس ہیں جنہیں آپ اپنی روٹین کاحصہ بناکرتندرست زندگی گزارسکتے ہیں۔


بلیک ٹی ،کافی یا چائے جیسے گرم مشروب کی ایک چسکی سےدن بھرکی تھکن اوردباؤسےجان چھڑائی جاسکتی ہے۔کہتے ہیں جلد سونااورجلد جاگنا انسان کوامیر،تندرست اورسمجھداربناتاہے۔

یہ بھی پڑھیں:امریکی سفارت کار کرنل جوزف کا نام بلیک لسٹ میں شامل

جی ہاں رات کوجلد سوئیں اورصبح سویرے اٹھ کردن کاآغازکریں۔اس سے نہ صرف جسم تندرست رہتاہے بلکہ ذہنی صلاحیت میں بھی اضافہ ہوتاہے۔


خوشبوئیں بھی انسانی موڈ پربہت اثرکرتی ہیں۔ایک مصروف دن گزارنے کے بعدشام کوگھرآئیں کتاب اٹھائیں اوراپنی پسندیدہ خوشبولگائیں آپ کی آدھی تھکن توفورادورہوجائے گی ۔

ورزش جیساتوکچھ بھی نہیں ۔روزانہ ورزش سے آپ جسمانی طورپربھی فٹ رہیں گے اوردماغی طورپربھی، صرف20منٹ کی واک 12گھنٹےکے لیے آپ کاموڈسیٹ کردے گا۔

پڑھنا مت بھولیں: پی ٹی آئی کا یوٹرن، خیبرپختونخوا حکومت کا بجٹ پیش کرنے کا فیصلہ

یوگاورزشیں نہ صرف کئی طرح کی بیماریوں میں فائدہ مندہیں بلکہ ہرعمرکےافرادکے لیے جسمانی صحت برقراررکھنے میں مددگارہوتی ہیں۔یوگاکرکے خودکوہمیشہ فٹ رکھیں۔


جب کام سے تھک جائیں توصرف چند لمحوں کے لیے آہستہ آہستہ لمبےاورگہرے سانس کھینچے اورچھوڑیں۔ اس عمل سے کام کے دوران سیٹ پربیٹھے بیٹھے ہی آپ کی تھکاوٹ میں واضح کمی ہوگی۔پریشانی اوردباؤکم کرنے کاایک طریقہ ہے زندگی کی اچھی اچھی باتوں کولکھیں۔سہانی یادیں ہمیشہ چہرے پرمسکراہٹ لے آتی ہیں۔اورٹینشن کہیں دوربھاگ جاتی ہے۔گپ شپ اورکھیل کود چاہے دوستوں کے ساتھ ہویافیملی کےساتھ، اس سے ذہنی دباؤبھی ختم ہوتاہے اورٹینشن بھی نہیں رہتی۔

موسیقی روح کی غذاہے۔جی ہاں،موڈکے مطابق میوزک نہ صرف آپ کوریلیکس کرے گابلکہ بلڈپریشرکوبھی نارمل کرےگا۔


اتناہی کام کریں جتنی طاقت ہو۔اضافی ذمہ داریاں نہ صرف کام کی صلاحیت کومتاثرکرتی ہیں بلکہ اس سے پریشانی میں بھی اضافہ ہوتاہے۔اورتواورکام کی زیادتی سےکوئی کام بھی ڈھنگ سے ہونہیں پاتا۔

یہ بھی پڑھیں: پٹرولیم مصنوعات کی درآمدات میں اضافہ

مسکرائیں اورمسکراتے رہیں اوراس کے لیےمزاحیہ تحریریں پڑھیں چاہے کوئی ٹی وی پروگرام دیکھیں یادوستوں کے ساتھ خوب ہنسیں بولیں۔تھکاوٹ یوں غائب ہوگی جیسے کبھی تھی ہی نہیں۔

جان ہے توجہان ہے۔جی جناب،خودکوکبھی نظراندازنہ کریں۔صحت بخش خوراک کھائیں،جسمانی آرام پرکبھی سمجھوتانہ کریں کیوں کہ خودپربوجھ ڈالنے سے صحت بھی جاتی ہے اورکام بھی متاثرہوتے ہیں۔