اسحاق ڈار عدالت پیش ہوں ورنہ وارنٹ جاری کریں گے: چیف جسٹس


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کو 8 مئی کو طلب کر لیا، چیف جسٹس نے کہا اگر اسحاق ڈارنہ آئے تو قانون کے مطابق وارنٹ جاری کریں گے۔  

سپریم کورٹ میں چیف جسٹس پاکستان  ثاقب نثار کی سربراہی میں سینیٹ الیکشن میں اسحاق ڈار کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف درخواست پرسماعت ہوئی۔ اسحاق ڈار کی جگہ ان کے وکیل سلمان اکرم بٹ عدالت میں حاضر ہوئے۔ چیف جسٹس نے سلمان اکرم بٹ سے پوچھا اسحاق ڈارکہاں ہیں؟ ۔ سلمان اکرم بٹ نے کہا اسحاق ڈار بیمار ہیں ۔ ڈاکٹرز نے انہیں سفر کرنے سے منع کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: چیف جسٹس کا نابینا وکیل کی اپیل کا نوٹس،لاہور ہائیکورٹ کو دوبارہ انٹرویو لینے کا حکم

جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ وزیراعظم لندن گئے تو اسحاق ڈارنے ان سے ملاقات کی ، سیٹیزن ایرسٹ کے قانون کو آپ جانتے ہیں،وزیراعظم کو شاید اس قانون کا علم نہیں ہو گا۔

چیف جسٹس نے کہا وہ اتنے لمبے عرصہ بیمار نہیں رہ سکتے، ان کی حاضری یقینی بنائیں، انہیں حفاظتی ضمانت دیں گے۔ عدالت نےاسحاق ڈار کو 8 مئی کو طلب کرتے ہوئے کہا کہ اگر پیش نہ ہوئے تو فیصلہ سنا دیں گے اور ہوسکتا ہے قانون کے مطابق وارنٹ جاری کردیں۔