ملک کے مفاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا:وزیر اعظم


اسلام آباد( 24نیوز ) وزیراعظم عمران خان وزارت خارجہ کا جائزہ لینے کیلئےپہنچ گئے،انہوں نے یہاں ایک اجلاس بھی کیا، عمران خان کاکہنا تھا کہ خارجہ پالیسی میں پاکستان کا مفاد ترجیح ہوگا، پاکستان کے قومی مفاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔
ذرائع کے مطابق وزارت خارجہ میں اعلیٰ سطح کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے وزارت خارجہ کے حکام کو پالیسی گائیڈلائن دیدی۔ بیرون ملک پاکستان کا مثبت تاثر اجاگر کرنے کا حکم دیا گیا،خارجہ پالیسی کو مزید فعال بنانے اورہمسایہ ممالک کیساتھ دوستانہ تعلقات کو فروغ دینے کی ہدایت کردی۔
ذرائع کا کہناہے کہ وزیراعظم نے بھارت کےساتھ دیرینہ مسائل کا حل خطے کی ترقی کیلئے ناگزیر قرار دیا،وزیراعظم نے واضح کیا کہ کسی بھی ملک کیساتھ خواہ مخواہ کا الجھاﺅ نہیں چاہتے تاہم قومی مفاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجائے گا۔
اس سے پہلے سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے خارجہ پالیسی پر تفصیلی بریفنگ دی جس میں افغانستان ،بھارت، امریکا، ایران،وسط ایشیا اور مشرق وسطی کے ممالک سے تعلقات پرروشنی ڈالی گئی،سیکرٹری خارجہ نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اورپاک بھارت تعلقات پر بھیآگاہ کیا۔
سیکرٹری خارجہ نے بتایا کہ بھارت پاکستان میں ریاستی دہشتگردی میں ملوث ہے، کلبھوشن یادیوکی گرفتاری نے بھارت کو بے نقاب کیا،وزیراعظم کوبتایا گیا کہ افغانستان سے بہتر تعلقات خارجہ پالیسی کا حصہ ہیں،امریکا کیساتھ تعلقات سرد مہری کا شکار ہیں، 5 ستمبر کوامریکی وزیر خارجہ کے دورے سے بہتری کی توقع ہے۔