آصف زرداری کے قائدِ اعظم کے یومِ ولادت، کرسمس پر خصوصی پیغامات


کراچی (24 نیوز) سابق صدر پاکستان محمد آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ پاکستان کے بانیوں نے اسے ایک ترقی پسند، جدید، کثیرالجہتی ریاست بنانے کا خواب دیکھا تھا جہاں قائداعظم کے الفاظ میں ریاست کا مذہب سے واسطہ نہیں ہوگا۔ مسیحی بھائیوں کو کرسمس کے موقع پر مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ حضرت عیسیٰ نے محبت، درگزر اور بھائی چارے کا سبق دیا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے قائداعظم کی 141 ویں یوم ولادت کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان میں ملائیت کی کوئی جگہ نہیں۔ جمہوریت، مذہب اختیار کرنے کی آزادی اور ضمیر کی آزادی کے ساتھ ساتھ قانون کی حکمرانی پاکستان کے قیام کے رہنما اصول تھے۔ ہم کچھ لوگوں کو مذہب یا کسی بھی نام پر چند لوگوں کو اس ملک کے حوالے نہیں کر سکتے۔

انھوں نے مزید کہا کہ اس موقع پر ہم بانیان پاکستان کو اور ان تمام لوگوں کو جنہوں نے یہ وطن حاصل کرنے کے لئے جانی، مالی اور ہر قسم کی قربانی دی انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔ ہم پاکستانی افواج، پولیس، قانون نافذ کرنے والے سویلین ادارو ں اور اس عوام کو بھی خراج عقیدت اور خراج تحسین پیش کرتے ہیں جنہوں نے انتہا پسندوں اور تشدد کے خلاف عظیم قربانیاں پیش کی ہیں۔

سابق صدر نے کہا کہ آئیڈیالوجی اور مذہب کو بہت زیادہ غلط استعمال کیا جا رہا ہے اور انہیں آزادی اظہار کو دبانے کے لئے استعمال کیا جا رہا ہے۔ اب اس بات کی اصلاح وقت کی ضرورت ہے۔ پاکستان پیپلزپارٹی اپنے اس عزم کا اعادہ کرتی ہے کہ وہ پاکستان کے قیام کے اصولوں کا تحفظ کرے گی۔

دریں اثنا آصف علی زرداری نے کرسمس کے موقع پر مسیحی برادری کو مبارکباد پیش کی ہے اور کہا کہ حضرت عیسیٰ نے محبت، درگزر اور بھائی چارے کا سبق دیا اور یہ وہ اقدار ہیں جنہیں آج ہمیں اپنی زندگیوں میں شامل کرنے کی جتنی ضرورت ہے، وہ پہلے کبھی نہیں تھی۔