لودھراں :6سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل


لودھراں (24نیوز) لودھراں میں بھی قصور کی کہانی دہرائی گئی، چھ سال کی عاصمہ کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا، بے چاری عاصمہ کی لاش گندے پانی کے جوہڑ میں تیرتی ملی، پولیس نے پوسٹ مارٹم کی بعد نمونے فرانزک تجزئے کیلئے بھجوا دئیے، ڈی پی او امیر تیمور کا کہنا ہے کہ قاتل کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔
تفصیلات کے مطابق زینب کے قاتل کو سزا مل گئی، لیکن بچیوں سے زیادتی اور ان کے قتل کے واقعات نہ رکے،قصور کے بعد لودھراں کی چھ سالہ عاصمہ ایک اور عمران کی درندگی کا نشانہ بن گئی۔
اہل خانہ کے مطابق عاصمہ 19 فروری سے لاپتہ تھی، لیکن پولیس سراغ نہ لگا سکی، جمعہ کو عاصمہ کی لاش قریبی گندے جوہڑ میں تیرتی ہوئی ملی،ڈی پی او لودھراں امیر تیمور نے بتایا کہ ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق عاصمہ کی موت اڑتالیس گھنٹے پہلے ہوئی اور اسے زیادتی کے بعد قتل کیا گیا، تحقیقات کیلئے ڈی این اے کے نمونے فرانزک تجزئیے کیلئے بھجوا دئیے ہیں۔
لودھراں کے مقامی ایم پی اے عامر اقبال شاہ نے یقین دہانی کرائی کہ قصور کی زینب کی طرح لودھراں کی عاصمہ کو بھی انصاف دلا کر رہیں گے،پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد عاصمہ کی میت لواحقین کے حوالے کردی، گھر میں کہرام مچ گیا، والدین اور عزیز و اقارب غم سے نڈھال ہوگئے، ننھی عاصمہ کو آہوں اور سسکیوں میں سپرد خاک کر دیا گیا۔