چیئر مین نیب سےمتعلق خبر کی اصل کہانی سامنے آگئی



اسلام آباد( 24نیوز ) نیب نے نجی ٹی وی چینل پرچیئرمین نیب سے متعلق نشرہونے والی خبرکی تردید کردی، ترجمان نیب نے کہا کہ حقائق کے منافی ، من گھڑت ، بے بنیاد اورجھوٹ پر مبنی پراپگنڈا ہے،خبرکامقصد چیئرمین نیب کی ساکھ کومجروح کرناہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان کے مطابق چیئر مین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال کے حوالے سے نجی ٹی وی پر چلنے والی خبر حقائق کے منافی ، بے بنیاد ، من گھڑت اور جھوٹ پر مبنی ہے، نجی ٹی وی چینل نے اس خبر کی تردیدکرتے ہوئے چیئر مین نیب سے معذرت طلب کرلی ہے، اس چینل کا سی

ای او نیب کی حراست میں ہے، نیب نے سی ای اوفاروق کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا تھا .

ترجمان نے کہا کہ اس خبر کا مقصد چیئر مین نیب کی ساکھ کو مجروح کرنا تھا، نیب نے دباﺅ کے باوجود بلیک میلر گروہ کے دو ارکان کوگرفتار کیا ہے اور ریفرنس کی منظوری دی ہے، اس گروہ کیخلاف مقدمات میں بلیک میلنگ اور اغواءبرائے تاوان کے الزاما ت ہیں،ترجمان نے کہا کہ بلیک میلر گروپ کاسرغنہ فاروق کوٹ لکھپت جیل میں قید ہے ، نیب نے دباﺅ اور بلیک میلنگ کوپس پشت پر ڈال کر اپنا کام کیا,بلیک میلر گروپ کے خلاف ملک بھر میں42ایف آئی آرز درج ہیں اور ان کیخلاف نیب اور ایف آئی اے کے جعلی افسربن کر لوگوں کولوٹنے کے ثبوت موجود ہیں، چینل کی خبر بھی نیب کو بلیک میل کرکے ریفرنس سے فرار کاراستہ تھی ۔

دوسری جانب چیئرمین نیب کو بلیک میل کرنے کی کوشش کرنے والے فاروق نول اور اس کی بیوی طیبہ گل عادی مجرم نکلے،کئی مقدمات میں مطلوب تھے، جیل بھی کاٹ چکے ہیں،ویڈیو میں موجود خاتون طیبہ گل نیب کی ملزمہ نکلی،نیب نےطیبہ گل اورفاروق نول کومالی بدعنوانی اورفراڈ کےالزام میں گرفتارکیاتھا معاملہ الٹا پڑنے پر جعلساز فاروق نول نے رنگ بدل لیا اور چیئرمین نیب جاوید اقبال سے معافیاں مانگنے لگا۔

 واضح رہے کہ گزشتہ روز نجی چینل کی آڈیو ٹیپ جس میں ایک آواز جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال سے منسوب کی گئی، آڈیو میں کوئی مرد ایک خاتون سے بظاہر ناشائستہ گفتگو کر رہا ہے، اسے بلیک میلرز گروہ کا جھوٹا پروپیگنڈا قرار دیا۔