چیئرمین نیب پر کس کادباؤ ہے؟ چڑیا کابڑا انکشاف



لاہور( 24نیوز ) چیئرمین نیب آج کل کن مشکلات کا شکار ہیں؟ ان پر کون دباؤ ڈال رہاحکومت یا اپوزیشن ؟ سنئیر صحافی نجم سٹیھی کی خبر حقائق سامنے لے آئی۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال سےمتعلق نجی ٹی وی پرچلنے والی خبروں کی تردیدقومی احتساب بیورو   نے بھی کی،ترجمان نیب نے کہا کہ حقائق کے منافی ، من گھڑت ، بے بنیاد اورجھوٹ پر مبنی پراپگنڈا ہے،خبرکامقصد  چیئرمین نیب  کی ساکھ کومجروح کرناہے، گزشتہ روز دیے گئےانٹرویو میں24نیوز کے سنئیر صحافی نجم سیٹھی نے بڑاانکشاف ظاہر کیا تھا،ان کاکہناتھاکہ چیئرمین تھوڑا دباؤ میں ہیں اور یہ پریسر وزیراعظم عمران خان کی جانب سے ہیں۔

سنئیر صحافی کاکہناتھاکہ نیب کو وزیراعظم عمران خان نے حکم دیا تھاکہ شریف برادران اورسابق صدر آصف علی زرداری کو فوراً گرفتار کیاجائے مگر اس کام میں تاخیر ہوگئی، چیئرمین نیب نے وزیراعظم کوجواب دیا کہ میں ان کے خلاف قانون کے کارروائی کررہا ہوں، موجودہ حالات سے یہ صاف ظاہر ہورہا ہے کہ وہ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان پسے ہوئے ہیں،مسلسل دباؤ کا شکار ہونے کی وجہ سے  چیئرمین نیب نے اپوزیشن اتحاد کو منتشر کرنے کے لئے کارروائیوں کا فیصلہ کیا۔

ان کاکہناتھاکہ اگر چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال اپوزیشن پر دباؤ کو بڑھائیں گے تو وزیراعظم عمران خان تو خوش ہوجائیں گے مگر ان پر الزامات کی بوچھاڑہوجائے گی، اس توازن کو برقرار رکھنے کے لئے انہوں نے پی ٹی آئی رہنما پروپز خٹک کو بھی پکڑنے کی حامی بھر ی، نیب کو پیپلزپارٹی اور ن لیگ تو پہلے ہی پسند نہیں کرتی مگر پی ٹی آئی بھی ان کو نظرانداز کرتی ہے اس کی بنیادی وجہ یہ ہی تھی کہ وزیراعظم عمران خان نے ان پر دباؤ ڈالا ہوا ہے،نیب کے بقول تینوں سیاسی جماعتیں مجھے پسند نہیں کرتی۔

سنئیر صحافی کامزید  کہناتھاکہ وزیراعظم نے اپنے ایک دوست کو  ڈپٹی چیئرمین لگایا ہے، نیب کو ڈر ہے کہ اگر کوئی الزام مجھ پر لگادیا تو گھر جانا پڑے گا،اور ایکٹنگ چیئرمین اپنے دوست کو لگادیں گے،ایکٹنگ چیئرمین پنجاب میں اینٹی کرپشن کے ہیڈ رہے ہیں,اگر  چیئرمین نیب حکومت کی ہدایات پر عمل پیرا ہونگے تو اسی میں ان کی سلامتی ہے، وگرنہ ان کی مشکلات مزید بڑھیں گی۔