49 دن سے سمندر میں پھنسا نوجوان معجزاتی طور پر بچ گیا

49 دن سے سمندر میں پھنسا نوجوان معجزاتی طور پر بچ گیا


جکارتا(24 نیوز)انڈونیشیا کے19سالہ نوجوان کی کشتی سمندری لہروں کے زور پر ہزارروں کلومیٹر دور  نکل گئی،49 دن سمندر میں گزارنے کے بعد  بھی معجزاتی طور پر زندہ رہا۔

جسے اللہ رکھےاسے کون چکھے۔انڈونیشیا کا انیس سالہ نوجوان ’اڈیی ناول ایڈلنگ‘ بالکل تنہا 49 بحر اوقیانوس میں گزار کر زندہ رہا ،نوجوان ساحل سمندر سے 125 کلو میٹر دور تیرتے مچھلیوں کے جال پر چراغ کی حفاظت کے طور پر کام کرتا تھا، جولائی کے وسط میں وہ علدی نیول کی چھوٹی سی کشتی میں سوار تھاجب کشتی سمندری لہروں کے زور پر ہزارروں کلومیٹر دور نکل گئی، نوجوان  ساحل سمندر سے2 ہزار 6سو 98کلومیٹر دور جا چکا تھا۔ 

اسکی کشتی میں کھانے پینے کا سامان بھی نہیں تھا مگر وہ سمندر میں مچھلی کا شکارکرکے گزر بسر کرنے لگا، پینے کیلئے سمندر کے نمکین پانی کو اپنے کپڑوں سے نچوڑ کر پیاس بجھا تارہا ، قسمت کی دیوی اس پر تب مہربان ہوئی جب ایک بحری جہاز کا  اس کےقریب سے گزرہوا ، بحری جہاز میں سوار افراد نے نوجوان کو بچا لیا۔انڈونیشین قونصل خانے کے مطابق نوجوان کو 31 اگست کو بچا لیا گیا۔