نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کیلئے ترمیمی مسودہ تیار

نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کیلئے ترمیمی مسودہ تیار


اسلام آباد ( 24 نیوز ) حکومت نے نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کیلئے ترمیمی مسودہ تیار کرلیا، اسکیم کو دسمبر 2019 تک جاری رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

وزرارت خزانہ کی ہدایت پر ایف بی آر نے نئی ایمنسٹی اسکیم کیلئے ترمیمی مسودہ کو حتمی شکل دیدی، مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی ہدایت پر ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کو سادہ اور آسان بنایا گیا ہے، اسکیم کو 31 دسمبر 2019 تک تک جاری رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔

ترمیمی مسودے کے مطابق 30 جون 2019 تک خفیہ اثاثے ظاہر کرنے پر5 فیصد، 30  ستمبر تک 10 فیصد جبکہ سال کے آخر تک اثاثے ظاہرکرنے پر 20 فیصد ٹیکس لاگو کرنے کی سفارش ہے، اسکیم کا اطلاق مقامی اور غیر ملکی اثاثوں پر ہوگا جبکہ اسکیم میں پاکستان بناؤ سرٹیفیکیٹ میں سرمایہ کاری کی تجویز دی گئی ہے۔

اسکیم سے ریئل اسٹیٹ سے وابستہ افراد بھی استفادہ کرسکیں گے، مسودے کے مطابق 30 جون تک پراپرٹی ظاہر کرنے پر ایک فیصد، 30 ستمبر تک 2 فیصد جبکہ 31 دسمبرتک 4 فیصد وصولی ہوگی، اسکیم میں ان ڈیکلیئر سیلز ظاہر کرنے پر 3 فیصد ٹیکس عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

اسکیم سے بے نامی اکاؤنٹس رکھنے والے فائدہ اٹھا سکیں گے، سال 2000 کے بعد سرکاری عہدہ رکھنے والے پر اسکیم کا اطلاق نہیں ہوگا، اسکیم کو صدارتی آرڈیننس کے ذریعے جاری کرنے کا آپشن زیرغور ہے۔