حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ سے 300 ارب کمالیے


کراچی (24نیوز) موجودہ دور حکومت میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی مد میں حکومت نے 300ارب روپے کمائے ،عوام کی جیبوں سے لیوی ٹیکس کی مد میں 25 ارب روپے نکالے گئے،عالمی مارکیٹ میں قیمتوں میں کمی کی اصل شرح بھی چھپائی جاتی رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع پیٹرولیم دویژن کے مطابق جون 2013 میں پیٹرول کی قیمت 99روپے 70پیسے اور ڈیزل کے نرخ 104روپے فی لیٹر تھے 4 سال 6ماہ میں حکومت نے 18مرتبہ پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کیا ہے ۔21 مرتبہ قیمتیں برقرار رکھیں گئیں، ساڑھے چار سالوں میں 14 بار پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی گی ہے۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے 18ارب36کروڑ روپے سبسڈی دینے کا دعویٰ کیا تھا موجود دور حکومت میں جی ایس ٹی اور لیوی بڑھا کر ریلیف کم کیا جاتارہا ہے 2014سے 2017 تک عوام کو ملنے والے300 ارب روپے کے ریلیف سے مالیاتی خسارہ کم کیا جاتا رہا ہے۔