پی ٹی آئی کی حکومت ٹریفک اہلکاروں کے لیے بیماری کا سبب بن گئی

پی ٹی آئی کی حکومت ٹریفک اہلکاروں کے لیے بیماری کا سبب بن گئی


پشاور( 24نیوز ) پشاورمیں جہاں ایک طرف بی آر ٹی منصوبہ پرکام جاری ہے وہیں سینکڑوں ٹریفک اہلکاربیمارہونےلگے،منصوبےکےباعث پیداہونےوالی گرد وغبار سے 400 ٹریفک اہلکاروں نے سانس کے مرض میں مبتلا ہونےکی شکایت کردی۔

 تفصیلات کے مطابق پشاورکا بی آرٹی منصوبہ جو گزشتہ سال شروع کیاگیامکمل ہونےکا نام ہی نہیں لےرہا، منصوبےکےباعث جہاں ٹریفک مسائل بڑھ گئےہیں وہیں سینکڑوں اہلکاروں نےسانس کی بیماری میں مبتلا ہونےکی شکایات کےانبارلگادیئے، ٹریفک پولیس کےچیف وارڈن نے پشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی سےرابطہ کیاتو حکام کی جانب سےپشاورکےسی ایم ایچ ہسپتال میں سانس ودیگربیماری میں مبتلا ہونےکی صورت میں تمام ٹریفک اہلکاروں کےعلاج و معالجےکی ذمہ داری لےلی۔

اب تک 250تک اہلکاروں نےٹریفک حکام کیساتھ اپنےنام کا اندراج کرایا ھے، ماہرین صحت  کا کہنا تھا کہ پشاورکا ماحول پہلےسےآلودہ ہے،بی آرٹی منصوبےکےباعث روزانہ کی بنیاد پرگردوغبارمیں اضافہ ہوکرخطرناک بیماریاں پیداہورہی ہیں تاہم اسکےلئےاحتیاطی تدابیراپناناوقت کی ضرورت ہے۔

ضرور پڑھیں:کھراسچ، 18 جون 2019

ٹریفک اہلکارماسک ودیگراحتیاطی تدابیرتواپنارہےہیں تاہم صوبائی حکومت کی جانب سےکوئی سہولت فراہم نہیں اورمنصوبہ مزید التواکی صورت میں کئی بیماریاں پیداہونےکیساتھ ساتھ شکایات سامنےآتی رہیں گی۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer