درختون کی کٹائی،محکمہ جنگلات نے حفاظت کی ذمہ داری اہل علاقہ پر ڈال دی


پشاور(24نیوز):ایک طرف بلین ٹری پراجیکٹ ہے تودوسری طرف خیبرپختونخوا میں ہی درختوں کا قتل عام جاری ہے۔ پشاورکےنواحی علاقوں میں سینکڑوں پودوں کو کاٹ دیا گیا، یہ پودے ماچس کے کارخانوں کو فروخت کئے جا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پشاور کے نواحی علاقےگھڑی چندن میں شاملاتی زمین پر ڈیڑھ سال قبل چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور وزیر اعلی خیبر پختونخواہ پرویز خٹک نے بلین ٹری کے ہزاروں درخت لگائے لیکن ابھی منصوبے کے کریڈٹ کی بازگزشت ختم نہیں ہوئی تھی کہ انہی درختوں کی کٹائی بھی شروع کر دی گئی۔

محکمہ جنگلات نے ٹمبر مافیا سے نمٹنے کے بجائے درختوں کی حفاظت کی ذمہ داری اہل علاقہ پر ڈال دی۔مقامی افراد کا کہنا ہے کہ مقامی پولیس کو مطلع کرنے کے باوجود بھی کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔