کلبھوشن کو کسی صورت بھارت کے حوالے نہیں کیا جائے گا: ترجمان دفتر خارجہ

کلبھوشن کو کسی صورت بھارت کے حوالے نہیں کیا جائے گا: ترجمان دفتر خارجہ


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان نے کشن گنگا ڈیم کی تعمیر کو سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی قرار دےدیا۔ ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا ہےکہ نہیں چاہتے ہیں کہ آبی تنازعات کسی خطرناک نتائج تک پہنچ جائیں ۔ پاکستان کلبھوشن یادیو کیس میں  جولائی میں جواب جمع کرائے گا لیکن اسے بھارت کے حوالے ہرگز  نہیں کیا جائے گا۔

 ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے ہفتہ وار پریس بریفنگ ،میں  نے کہا کشن گنگا ڈیم  کی تعمیر سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔ یہ خلاف ورزی بھارت کےلیے نقصان دہ ثابت ہوگی، ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی وفد نے عالمی بینک کے سربراہ سے ملاقات کی اور آبی تنازعات کو حل کرانے کی ضرورت پر زور دیا۔

 یہ خبر بھی پڑھیں: کراچی: نگراں وزیراعظم کا تقرر، آصف علی زرداری سے پارٹی رہنماؤں کی ملاقات

ڈاکٹر فیصل نے کہا کلبھوشن یادیو کیس میں جالائی میں  جواب جمع کرایاجائے گا۔ کلبھوشن کو کسی صورت بھارت کے حوالے  نہیں کیا جائے گا۔

ڈاکٹر فیصل نے کہا ماہ رمضان میں نہتےکشمیروں پر بھارتی  مظالم بڑھ گئے ہیں،  عالمی برادری بھارتی مظالم کا نوٹس لے۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ زمین حقائق معلوم کرنے کے لیے بھارت اور پاکستان میں مصبرمشن کو مقبوضہ وادی میں جانے کی اجازت دی جائے۔