اسد درانی کی کتاب پر آرمی چیف کا بڑا فیصلہ، 28 مئی کو جی ایچ کیو طلب

اسد درانی کی کتاب پر آرمی چیف کا بڑا فیصلہ، 28 مئی کو جی ایچ کیو طلب


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان کی خفیہ ایجنسی انٹرسروسز انٹیلی جنس (آئی ایس آئی) کے سابق ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانی کی کتاب پر پاک فوج نے تحفظات کا اظہار کر دیا۔ سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ کتاب میں بہت سے موضوعات حقائق کے برعکس بیان کیے گئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کےمطابق اسد درانی کی کتاب پرپاک فوج کو تحفظات ہیں۔ اس پر آرمی چیف جنرل قمرجاویدباجوہ نے بڑا فیصلہ کیا ہے۔لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ اسددرانی کو 28مئی کوجی ایچ کیوطلب کر لیا گیا ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ اسد درانی کو اپنی پوزیشن واضح اوردعوے کی وضاحت کرناہو گی۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق اسد درانی کی کتاب پر پاک فوج کی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے۔ کئی موضوعات حقائق سے ہٹ کر ہیں۔ اسد درانی کو اپنے بیانات پر پوزیشن واضح کرنے کیلئے جی ایچ کیو طلب کیا جا رہا ہے۔ایک بر وقت اور زبر دست اقدام کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: اسد درانی کی کتاب پر قومی اسلامتی کمیٹی کا اجلاس طلب کیا جائے، نواز شریف 

ملٹری کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی پر پوزیشن واضح کرنا ہو گی۔ سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ قانون سے بالا تر کوئی بھی نہیں۔جبکہ یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ  پاک فوج کا کوئی سابق افسر بھی ملکی مفاد کے خلاف بات کرے گا تو اس کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔

خیال رہے کہ سابق 'را' چیف اے ایس دلت کے ساتھ مل کر لکھی گئی کتاب 'دی سپائے کرونیکلز: را، آئی ایس آئی اینڈ دی الوژن آف پیس' میں پاکستان اور بھارت کے درمیان اہم معاملات پر بات کی ہے۔ جس پر پاک فوج نے تحفظات کا اظہار کیا ہے۔