خواجہ آصف تاحیات نا اہل، اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ


اسلام آباد( 24نیوز ) وزیرخارجہ خواجہ آصف نا اہلی کیس کا فیصلہ آج گیا،عدالت نے ان کو نااہل قرار دے دیا ہے،اسلام آباد ہائی کورٹ کے لارجر بنچ کے سربراہ جسٹس اطہر من اللہ نے فیصلہ سنایا ہے،خواجہ آصف کو آرٹیکل باسٹھ ون ایف کے تحت نااہل قرار دیا گیا ہے،اس طرح ان کا سیاسی کیرئیر ختم ہوگیا ہے ۔
یا د رہے اس سے قبل مسلم لیگ ن کے قائد ،سابق وزیر اعظم نواز شریف،پی ٹی آئی کے جنرل سیکرٹری جہانگیر ترین کو بھی نااہل قرار دے دیا گیا تھا۔ان پر بھی یہی شق باسٹھ ون ایف لاگو کی گئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار نے خواجہ آصف نا اہلی کی درخواست دائر کی تھی۔ گزشتہ سماعت پر لارجر بنچ نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا تھا۔جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ عثمان ڈار کے وکیل سکندر بشیر مرزا نے خواجہ آصف کی نااہلی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ میں دستاویزات جمع کرائے۔

پڑھنا نہ بھولیں: عباسی حکومت کیخلاف بڑا فیصلہ محفوظ 

جس کے مطابق خواجہ آصف 2008 سے اب تک غیر ملکی کمپنی کے ملازم ہیں اور 2013 کے کاغذات نامزدگی میں بھی ظاہر نہیں کیا۔ جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب کے کیس سننے سے معذرت پر بنچ ٹوٹَ گیا۔جس کے بعد چیف جسٹس ہائی کورٹ جسٹس انور خان کاسی نے نیا لارجر بنچ تشکیل کیا۔ جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ میں جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:ن لیگی حکومت اقتصادی اہداف حاصل کرنے میں ناکام

عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا۔ خواجہ آصف کی جانب سے کمپنی کا خط بھی عدالت میں پیش کیا گیا۔ جس میں لکھا گیا کہ خواجہ آصف سے قانونی معاونت کا معاہدہ تھا۔ ان کو ٹیلی فون پر یا ان کے دورہ یو اے ای پر بھی مشاورت کی جاتی ہے۔ جس کے لیے ان کا وہاں پر ہونا ضروری نہیں ہے۔ یو اے ای کی کمپنی نے اپنا نمائندہ پاکستان بھیج کر عدالت میں گواہی پر بھی آمادگی کا اظہار کیا گیا۔ جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا تھا کہ اس خط نے تو رہی سہی کسر بھی نکال دی ہے۔

35 صفحات پر مشتمل فیصلے کے مطابق خواجہ آصف کو آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت تاحیات نااہل قرار دیا گیا ہے، جس کے بعد ان کی قومی اسمبلی کی رکنیت بھی ختم ہوگئی,عدالت عالیہ نے فیصلے کی مصدقہ کاپی الیکشن کمیشن کو بھجوانے کا حکم بھی دیا، جس کے بعد خواجہ آصف کو قومی اسمبلی نشست سے ڈی سیٹ کرنے  کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے گا۔

ویڈیو دیکھیں:

یاد رہے فیصلہ سننے کیلئے کمرہ عدالت کھچا کھچ بھرا ہوا تھا جس میں مسلم لیگ ن ،پی ٹی آئی کے کارکنا ن کے علاوہ بڑی تعداد میں صحافی بھی موجود تھے۔

فیصلہ آتے ہی کمرہ عدالت ”گو نواز گو“کے نعروں سے گونج اٹھا،پی ٹی آئی کے رہنماﺅں،کارکنوں نے مٹھائی تقسیم کی ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے باہر جشن منایا گیا۔

خواجہ آصف کا فیصلے کو چیلنج کرنے کا اعلان
سابق وزیر خارجہ خواجہ آصف کا نااہلی کے بعد اہم بیان سامنے آگیا ہے،ان کا کہنا ہے کہ میں اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کروں گا، اس میں کسی نے کوئی کمال نہیں کیا، یا تو انہوں نے اقاما چھپایا تھا، اگر چھپائی ہوئی چیز باہر آتی تو کمال ہوتا۔ مسلم لیگ (ن) کےرہنما کا کہنا تھاکہ وہ جب سے سیاست میں آئے انہوں نے تب سے اپنے اکاؤنٹس اور اقاما ظاہر کیا ہوا تھا جو انہوں نے الیکشن کمیشن میں بھی ڈکلیئرڈ کیا، جس اقامے کی تصویر دکھائی جارہی ہے وہ خود الیکشن کمیشن کو دیا ہے۔

واضح رہے کہ خواجہ آصف 2013 کے عام انتخابات میں این اے 110 سیالکوٹ سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔

اتفاق فاﺅ نڈری کا سریا خواجہ آصف کی گردن سے نکال دیا:عثمان ڈار 

 تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا  کہ آج شریف فیملی کی اتفاق فاﺅ نڈری کا سریا خواجہ آصف کی گردن سے نکال دیا ہے جو وہ اپنے لیڈر عمران خان کے قدموں میں پیش کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاست میں خواجہ آصف کی کوئی جگہ نہیں رہی انکو مفت کا مشورہ دیتا ہوں کہ شوکت خانم کے باہر فروٹ کی ریڑھی لگا کے حلال کی روزی روٹی کمائیں۔

”گاڈ فادر“کا ایک اور درباری گیا!
پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے ردعمل دیتے ہوئے اپنے ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ ”گاڈ فادر“کا ایک اور درباری نااہل ہوگیا ،انہوں اللہ کا شکر ادا کیا اور کہا ہے کہ ملک اور بیرون ملک ذلیل ہوگئے ،خواجہ آصف منی لانڈرنگ اور اقامہ چھپانے کے سکینڈل میں ملوث رہے۔

عوام اب خواجہ آصف کے سائے کو بھی ووٹ دیں گے:مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ(ن) کی رہنما مریم نواز کا کہنا ہے کہ عوام اب خواجہ آصف کے سائے کو بھی ووٹ دیں گے۔خواجہ آصف کی نااہلی کے فیصلے پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ(ن) کی رہنما مریم نواز کا کہنا تھا کہ جس کا ووٹ کے میدان میں مقابلہ نہیں کر سکتے اس کو فکسڈ میچ میں نااہل کرا دو، مگر یاد رکھو عوام اب خواجہ آصف کے سائے کو بھی ووٹ دیں گے۔

”ٹریکٹر ٹرالی“کا بدلہ لے لیا

تحریک انصاف کی رہنما ءشریں مزاری نے بھی اپنے آپ کو خواجہ آصف کی طرف سے”ٹریکٹر ٹرالی“کہنے کا بدلہ لیا ،انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف کو شرم کرنی چاہیے،حیا کرنی چاہیے اور قوم سے معافی مانگنی چاہیے۔

خواجہ آصف کو نااہل قراردینے والی عدالت نے اسے بوجھل دل کے ساتھ مجبوری میں کیا گیا فیصلہ قراردے دیا۔اسلام آبادہائی کورٹ کے تین رکنی بینچ نے خواجہ آصف کی نااہلی کے فیصلہ کے آخر میں طویل پیراگراف لکھا ہے جس میں عدالت کی مجبوری بیان کی کی گئی ہیں۔

جسٹس اطہر من اللہ کے تحریر کردہ فیصلہ میں لکھا گیا ہے کہ یہ فیصلہ بوجھل دل کے ساتھ دیا گیا ہے ۔ ایک طرف ملک کی ایک بڑی سیاسی شخصیت کو نااہل کیا گیا تو دوسری طرف اس حلقہ کے تین لاکھ بیالیس ہزار ووٹرز کے خوابوں اور امنگوں کو بھی نقصان پہنچا۔

عدالت نے سیاسی معاملات میں عدالتی فیصلوں کو ناخوشگوارفریضہ قراردیا ہے۔ فیصلے میں لکھا گیا ہے کہ سیاست دان اگر اپنے معاملات پارلیمان میں حل کر لیں تو عدالتوں کا ایسے مقدمات پر ضائع ہونے والا وقت بچے گا اور عام سائلین کے مقدمات پر یہ وقت صرف ہو گا۔