پنجاب اسمبلی کے باہر ڈینگی ملازمین، پولیس میں جنگ چھڑ گئی


لاہور(24نیوز) کو پر روڈ اس وقت میدان جنگ بن گیا جب پولیس اور ڈینگی ملازمین آمنے سامنے آگئے۔ ڈنڈے اور اینٹیں چل گئیں جس سے متعدد افراد زخمی ہوگئے۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے واٹر کینن کا استعمال شروع کردیا۔

ذرائع کے مطابق کوپر روڈ پر پنجاب اسمبلی کے باہر پولیس اور ڈینگی ملازمین میں تصادم ہوا۔ پولیس نے مظاہرین پر لاٹھی چارج اور شیلنگ کی جبکہ مظاہرین کی جانب سے پولیس پر اینٹیں برسائی گئیں۔ مشتعل ڈینگی مظاہرین نے پولیس تشد د کا غصہ سرکاری املاک اور گاڑیوں پر نکالا۔ شیشے توڑ دیئے ہیں۔ ٹائروں کو آگ لگا دی۔   پولیس کی حفاظتی جیکٹس کو بھی نذر آتش کردیا۔ رکاوٹیں ہٹا دیں۔

یہ بھی پڑھیں:ڈرگ ایسوسی ایشن کی پنجاب بھر میں ہڑتال،  ادویات نہ ملنے پر مریض پریشان

مظاہرین کے احتجاج کے باعث کوپر روڈ پر ٹریفک جام ہوگئی ہے۔ گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ہیں جس کی وجہ سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ۔ پولیس اہلکار  واٹرکینن۔ آنسو گیس کی  جاری۔ پولیس نے متعدد احتجاجی ملازمین گرفتار کرلیے ہیں جن میں خواتین بھی شامل ہیں۔ ڈینگی ملازمین ریگولر نہ کئے جانےپر گزشتہ دس روز سے ڈی جی ہیلتھ کے دفتر کے سامنے دھرنا دئیے بیٹھے تھے۔ کسی نے نہ سنی تو ڈینگی ملازمین نے پنجاب اسمبلی کا رخ کیا۔