نئی حلقہ بندیوں کے معاملے میں اہم پیشرفت


اسلام آباد (24نیوز) نئی حلقہ بندیوں کا معاملے پر اہم پیشرفت ہوئی ہے، 2018 کے عام انتخابات کیلئے اسلام آباد کو تین حلقوں میں تقسیم کرنے کی تجویز دی گئی ہے، این اے 48 اور 49 کو ختم کرکے 52،53،54 بنانے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نئی حلقہ بندیوں کا معاملہ،الیکشن 2018 میں اسلام آباد کے تین حلقے ہونگے،این اے 48 اور 49 کو ختم کرکے 52،53،54 بنانے کی تجاویز تیار کرلی گئیں،تین حلقوں کو 52،53،54 کرنے کی تجویز، دستاویزات کے مطابق حلقہ این اے 52 سید پور سے گولڑہ تک محدود کرنے کی تجویز،دستاویزات کے مطابق حلقہ این اے 53 ملپور سے آئی نائن تک محدود رکھنے کی تجویز کی گئی،تینوں حلقوں میں آبادی کا تناسب برابر رکھنے کی تجویزرکھی گئی ہے۔

دستاویزات کے مطابق این اے 52 میں 6 لاکھ 45 ہزار،53 میں 6 لاکھ 72 ہزار،54 میں 6لاکھ 54 ہزار رکھنے کی تجویز، دستاویزات کے مطابق این اے52 کو 15 یونین کونسلوں پر مشتمل رکھنے کی تجویز کی گئی ہے،این اے 52 میں15 یونین کونسلز بنانے کی تجویز کی گئی ہے،این اے 53 میں 20 یونین کونسلز بنانے کی تجویز پیش کی گئی ہے،اسلام آباد میں حلقوں کی تعداد بڑھنے سے امیدواروں نے بھی رابطے شروع کردئیے ہیں۔