لاہور :ریلوے پینشن خورد برد کرنے کے 21 سالہ پرانے کیس کی سماعت

لاہور :ریلوے پینشن خورد برد کرنے کے 21 سالہ پرانے کیس کی سماعت


لاہور(24نیوز) لاہور کی عدالت میں 21 سال پرانے کیس کی سماعت ہوئی۔ ریلوے کی پنشن میں 1 کروڑ کی خورد برد کرنے والے 6 ملزم فوت ہوگئے۔ 6 گواہ بھی چل بسے، دیگر 2 ملزم بیماری کی وجہ سے پیش نہیں ہو رہے۔2 سال گزرنے کے باوجود کیس کا فیصلہ نہ ہوسکا۔

 سپیشل جج سنٹرل لاہور محمد رفیق کی عدالت میں ریلوے پینشن خورد برد کرنے کے اکیس سالہ پرانے کیس کی سماعت ہوئی۔ کیس کے آٹھ۔ ملزمان میں سے چھ ملزمان عدالت میں پیش ہوتے ہوتے فوت ہوگئے ۔ دو ملزمان، نصیراحمد سابق اسٹنٹ اکاونٹس افیسر محمد نصیر پے ماسٹر ریلوے بیماری کی وجہ سے پیش نہیں ہو رہے ۔ عدالت میں اکیس سالوں میں دس گواہ قلمبند کیے گئے، آج آخری گواہ انسپکٹر پرویز کا بیان قلمبند عدالت نے زندہ رہ جانے والے چار ملزمان کو بیان کے لیے اکتیس جنوری کو طلب کر لیا۔ ریلوے پولیس نے 1999میں دس ملزمان کے خلاف ایک کروڑ روپے پینشن خوردبرد کرنے پر مقدمہ درج کیا چھ ملزم مر گئے باقی چار پیش ہو رہے ہیں ۔ کیس کے چھ گواہ بھی عدالت میں پیش پیش ہوتے ہوتے انتقال کر گئے ۔