اسلام آباد: پلاسٹک بیگز کے استعمال میں خطرناک حد تک اضافہ

اسلام آباد: پلاسٹک بیگز کے استعمال میں خطرناک حد تک اضافہ


اسلام آباد(24نیوز) پلاسٹک بیگز کے استعمال میں خطرناک حد تک اضافہ ، پلاسٹک بیگز کے خطرات کو نظر انداز کرکے شہری پلاسٹک بیگز استعمال کرتے ہیں جسے ماہرین نے ماحول کیلئے انتہائی خطرناک قرار دے رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بگڑتے ماحول اور موسمیاتی تبدیلیوں کیلئے پلاسٹک بیگز خطرہ بن گئے۔ سینیٹ میں وزیر موسمیاتی تبدیلی مشاہد اللہ نے ماہرین کی آراء سے تحریری جواب دیتے ہوئے انکشاف کیا کہ سالانہ 55 ارب پلاسٹک تھیلوں میں اضافہ ہو رہا ہے جو کہ ماحول کیلئے انتہائی خطرناک ہے۔ شہریوں نے خطرے کو جانتے ہوئے پلاسٹک بیگز کے متبادل کا مطالبہ کیا ہے۔ اسکول کے بچوں نے بھی پلاسٹک بیگز کے خطرات پر حکومت سے مطالبہ کیا کہ ان پر پابندی عائد کرکے صحت مند ماحول فراہم کیا جائے۔ متعدد بیماریوں کا باعث بننے والے پلاسٹک بیگز میں بچے بھی چیزیں کھاتے ہیں۔

 ماہرین کے مطابق موسمیاتی تبدیلیوں میں بگاڑ پیدا کرنے والے پلاسٹک بیگز کا جلد متبادل ممکن نہیں تاہم کمی پر کام کیا جاسکتا ہے۔