انتظار قتل تحقیقات، والد اورمدیحہ کیانی سمیت دیگرلوگوں کےبیانات ریکارڈ

انتظار قتل تحقیقات، والد اورمدیحہ کیانی سمیت دیگرلوگوں کےبیانات ریکارڈ


کراچی (24 نیوز) کراچی میں نوجوان انتظار احمد کے قتل کی تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی کا پہلا اجلاس ہوا جس میں انتظار کے والد اور مدیحہ کیانی سمیت دیگر لوگوں کے بیانات ریکارڈ کرلئے گئے۔

اجلاس کی سربراہی ایس ایس پی پرویز چانڈیو نے کی، جے آئی ٹی میں پولیس، رینجرز، اسپیشل برانچ اور حساس اداروں کے نمائندگان شامل ہیں۔ اجلاس میں کیس کے مدعی مقتول انتظار کے والد اشتیاق احمد اپنے وکیل آصف خدائی کے ہمراہ پیش ہوئے، دونوں نے بیانات ریکارڈ کرائے اور روانہ ہوگئے۔ اس دوران مدعی کے وکیل آصف خدائی نے گھر جاتے ہوئے انتظار کے والد کو میڈیا سے بات کرنے سے روک دیا۔ کچھ دیر بعد مدعی کے وکیل آصف خدائی نے اپنا وڈیو پیغام بھی جاری کیا۔

سی ٹی ڈی سول لائن میں جے آئی ٹی کے پہلے اجلاس میں کیس کی عینی شاہد مدیحہ کیانی ، ایس ایس پی مقدس حیدر، کیس میں نامزد اے سی ایل سی کے 9 اہلکار اور کیس سے جڑٖے دیگر افراد پیش ہوئے۔ تمام افراد نے جے آئی ٹی کو اپنے بیانات ریکارڈ کرائے اور اجلاس اختتام پذیر ہوگیا۔

جے آئی کا دوسرا اجلاس ہفتے کو ہوگا جس میں کیس سے متعلق فارنزک رپورٹ اور پوسٹ مارٹم رپورٹس کا جائزہ بھی لیا جائے گا اور جے آئی ٹی جائے وقوعہ کا دورہ بھی کرے گی۔ دوسری جانب انتظار قتل کیس میں ڈی آئی جی عامر فاروقی پہلے ہی پولیس پارٹی کی ناکامی، ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی اور انتظار کی گاڑی کو روکنے کے بیانات میں شکوک و شبہات کا اظہار کرچکے ہیں۔ یہاں تک کہ انتظار کو اغوا کیے جانے کا بھی شبہ ظاہر کیا تھا جس کے بعد اب جے آئی ٹی مدیحہ کیانی ، مقدس حیدر اور دیگر کے بیانات کی روشنی میں مزید تحقیقات کرکے نتیجے تک پہچنے کی کوشش کرے گی۔