عام انتخابات،بڑے بڑے برج الٹ گئے

عام انتخابات،بڑے بڑے برج الٹ گئے


لاہور( 24نیوز ) عام انتخابات میں بڑے بڑے برج الٹ گئے،جیت کے لئے پر اعتماد”الیکٹیبلز“کو بھی ہار کا منہ دیکھنا پڑا۔
تفصیلات کے مطابق سابق و زیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کراچی،سوات سے ہار گئے،لاہور سے جیت گئے،ان کو پی ٹی آئی کے فیصل واوڈا اور سلیم الرحمان نے شکست دی،بلاول بھٹو زرداری مالا کنڈ سے ہار گئے۔
امیر جماعت اسلامی سراج الحق دیر سے شکست کھا گئے،لاہور میں خواجہ سعد رفیق کو عمران خان نے ہرادیا،ڈیر ہ اسماعیل خان سے مولانا فضل الرحمان کو پی ٹی آئی کے یعقوب شیخ نے ہرایا،فیصل آباد میں عابد شیر علی کو فرخ حبیب نے شکست دی،این اے 150میں فخر امام نے رضا حیات ہراج کو شکست دیدی۔لاہور میں ن لیگ کے ایاز صادق نے سخت مقابلے میں پی ٹی آئی کے عبدالعلیم کو شکست دی۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ سیاسی رہنماؤں کے تبصرے ، انتخابی دنگل کے نتائج ملنے کا سلسلہ جاری
اسلام آباد میں عمران خان نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو بری طرح ہرا ڈالا،راولپنڈی کے ناقابل شکست کہلائے جانیوالے چودھری نثار بھی این اے کی دونوں سیٹیں ہار گئے،جھنگ میں علا مہ احمد لدھیانوی کو پی ٹی آئی کی غلا م بی بھروانہ نے پچھاڑ دیا،ملتان میں سکندر حیات بوسن،عبدالقادر گیلانی،سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی کے برج بھی زمین بوس ہوگئے۔

این اے 130 لاہور 8 سے پی ٹی آئی کے شفقت محمود 127,405 ووٹوں کے ساتھ کامیاب رہے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے خواجہ احمد حسن 104,625 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے,این اے 191 ڈیرہ غازی خان 3 سے پی ٹی آئی کے زرتاج گل 79,817 ووٹ لے کر کامیاب جبکہ مسلم لیگ (ن) کے اویس لغاری 54,548 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

 جھنگ میں سب سے پرانے پارلمنٹیرین اور پیپلز پارٹی کے رہنما سید فیصل صالح حیات کو پی ٹی آئی کے صاحبزادہ محبوب سلطان نے شکست دیدی۔سیالکوٹ سے ن لیگ کے خواجہ محمد آصف نے پی ٹی آئی کی مضبوط وکٹ توڑ دی،عثمان ڈار شکست کھا گئے،مسلم لیگ ن کے طلال چودھری پی ٹی آئی کے نواب شیر وسیر سے ہار گئے۔

 یاد رہے کچھ نشستوں پر ابھی نتائج آنا باقی ہیں،اب تک پی ٹی آئی پہلے،ن لیگ دوسرے،پیپلز پارٹی تیسرے اور آزاد امیدوران چوتھے نمبر پر ہیں, پاکستان تحریک انصاف کے 'نئے پاکستان ' کا خواب پورا ہونے کے قریب نظر آرہا ہے اور غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کو قومی اسمبلی کی 119 جبکہ مسلم لیگ (ن) کو 61 نشستوں پر برتری حاصل ہے۔